افغان صوبہ غزنی میں خودکش کار بم حملہ، کم از کم 26 ہلاک

DW ڈی ڈبلیو اتوار نومبر 12:40

افغان صوبہ غزنی میں خودکش کار بم حملہ، کم از کم 26 ہلاک

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ ۔ DW اردو۔ 29 نومبر 2020ء) حالیہ چند ماہ کے دوران افغان سکیورٹی فورسز پر یہ خونریز ترین حملہ ہے۔ یہ خودکش کار بم حملہ افغانستان کے مشرقی صوبہ غزنی کے دارالحکومت غزنی کے مضافات میں واقع ایک فوجی اڈے پر آج اتوار 29 نومبر کو کیا گیا۔ صوبہ غزنی میں طالبان اور افغان فورسز کے درمیان اکثر جھڑپیں ہوتی رہتی ہیں۔

کابل میں ایرانی کتاب میلے پر خونریز حملے میں انیس افراد ہلاک

افغان صوبے نیمروز میں طالبان کا حملہ، کم از کم بیس فوجی ہلاک

کابل یونیورسٹی میں ایرانی کتاب میلے پر حملہ، کم از کم 10 طلبا ہلاک

غزنی ہسپتال کے ڈائریکٹر باز محمد ہمت نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا، ''ابھی تک 26 لاشیں اور 17 زخمی ہسپتال لائے جا چکے ہیں اور یہ کہ یہ تمام سکیورٹی اہلکار ہیں۔

(جاری ہے)

‘‘

صوبہ غزنی کی صوبائی کونسل کے ایک رکن ناصر احمد فقیری نے بھی اس خودکش کار بم حملے میں ہونے والی ہلاکتوں کی تعداد کی تصدیق کی ہے۔

افغانستان کی وزارت داخلہ کے ترجمان طارق آریان نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ ایک خودکش بمبار نے دھماکا خیز مواد سے بھری گاڑی صوبہ غزنی میں دھماکے سے اڑا دی ہے تاہم انہوں نے ہلاکتوں کے بارے میں کچھ نہیں بتایا۔

ابھی تک اس حملے کی ذمہ داری کسی نے قبول نہیں کی۔

ا ب ا / ب ج (اے ایف پی)