Live Updates

ویکسینیشن کے ذریعے کورونا وائرس کی شدت سے بچا جاسکتا ہے، ماہرین

امریکا میں کورونا وائرس کے باعث ہسپتالوں میں داخل اور انتقال کر جانے والوں میں لگ بھگ سب وہی افراد شامل ہیں جن کی ویکسینیشن نہیں ہوئی، رپورٹ

ہفتہ 24 جولائی 2021 15:02

ویکسینیشن کے ذریعے کورونا وائرس کی شدت سے بچا جاسکتا ہے، ماہرین
نیویارک (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 24 جولائی2021ء) ماہرین نے کہاہے کہ ویکسینیشن کے ذریعے کورونا وائرس کی شدت سے بچا جاسکتا ہے۔غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق امریکا میں کورونا وائرس کے باعث ہسپتالوں میں داخل اور انتقال کر جانے والوں میں لگ بھگ سب وہی افراد شامل ہیں جن کی ویکسینیشن نہیں ہوئی، برطانیہ اور اسرائیل سے حاصل کردہ حقیقی دنیا کے اعدادوشمار سے اس خیال کو تقویت ملتی ہے کہ ویکسینیشن سے بیماری کے بدترین اثرات سے تحفظ ملتا ہے، بریک تھرو کیسز (یعنی ویکسنیشن کے بعد بیمار ہونے والے افراد کے لیے استعمال ہونے اصطلاح) کی شرح مجموعی کیسز میں بہت کم ہے۔

امریکی کے اہم ترین وبائی امراض کے ماہر ڈاکٹر انتھونی فاوچی نے بتایا کہ جب آپ بریک تھرو کیسز کے بارے میں سنتے ہیں تو اس کا مطلب یہ نہیں کہ ویکسین ناکارہ ہورہی ہے۔

(جاری ہے)

رواں ہفتے تشویش میں مبتلا امریکی سینیٹ کے پینل کو ڈاکٹر انتھونی فاوچی نے بتایا کہ ویکسینز کام کررہی ہیں وہ بھی اس وقت جب کورونا کی بہت زیادہ متعدی قسم ڈیلٹا ویکسین نہ لگوانے والے افراد کے درمیان تیزی سے پھیل رہی ہے۔

طبی حکام نے خبردار کیا کہ اگرچہ کووڈ ویکسینز بہت زیادہ مؤثر ہیں، یعنی تحقیقی رپورٹس کے مطابق فائزر اور موڈرنا سے علامات والی بیماری سے 95 فیصد تک تحفظ ملتا ہے، مگر وہ مکمل تحفظ فراہم نہیں کرتیں بلکہ کوئی بھی ویکسین 100 فیصد مؤثر نہیں مگر ڈیلٹا قسم کے پھیلنے سے قبل بریک تھرو کیسز عوامی توجہ کا مرکز نہیں تھے تاہم اب خطرات بڑھنے کے پیش نظر عوامی پریشانی میں اضافہ ہوا ہے، شہ سرخیوں سے ویکسینیشن مکمل کرانے والے افراد سوچتے ہیں کہ وہ اب تک ویکسین استعمال نہ کرنے والے اجنبیوں سے ملاقاتوں پر معمول کی زندگی میں توازن برقرار رکھ سکتے ہیں، بالخصوص اگر ان کے خاندان میں خطرے سے دوچار افراد ہوں جیسا کہ بچے جو فی الحال ویکسین نہیں لگوا سکتے۔

کھیلوں میں دلچسپی رکھنے والے افراد نیویارک یانکیس سے سمر اولمپکس تک روزانہ کورونا وائرس سے متاثر ایتھلیٹیس سے متعلق رپورٹس دیکھ رہے ہیں، امریکی جمناسٹک ٹیم کی رکن کارا ایکر ویکسین لگواچکی تھی لیکن ان میں ٹوکیو میں جاری ٹریننگ کیمپ کے دوران کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔ویمن نیشنل باسکٹ بال کی کھلاڑی کیٹی لو سموئیل سن کا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد انہیں تھری-آنطتھری باسکٹ بال مقابلے سے باہر کردیا گیا جبکہ ان کی ویکسینیشن مکمل ہوچکی ہیں۔

بریک تھرو کورونا کیسز کی رپورٹس نے امریکی دارالحکومت میں موجود سیاست دانوں کو ہلا دیا ہے کیونکہ کانگریس کے اراکین، اور فلوریڈا کے ری پبلکن رکن ورن بچنن، ٹیکساس کے کچھ قانون دانوں سمیت ہاؤس کے کم از کم دو افراد میں ویکسینیشن کے بعد کووڈ کی تصدیق ہوئی ہے۔وائٹ ہاوس کے پریس سیکریٹری جین ساکی نے بتایا کہ وائٹ ہاؤس کیمپس میں روزانہ 2 ہزار افراد آتے ہیں تو کچھ بریک تھرو کیسز سے بچنا ممکن نہیں، مگر انتظامیہ کی جانب سے اس وقت تفصیلات جاری کی جائیں گی جب عملے کے ایسے کسی بیمار فرد کا صدر، نائب صدر یا ان کے گھروالوں سے قریبی رابطہ ہوا ہو۔
Live پاکستان میں کرونا وائرس کی چوتھی لہر سے متعلق تازہ ترین معلومات