Live Updates

افغانستان میں امن کی خاطر ہم ان کی کڑوی باتیں برداشت کرتے ہیں

اگر افغان مسئلے کا فوجی حل ہوتا تو 20 سالوں میں نکل چکا ہوتا، وزیر خارجہ

Sajjad Qadir سجاد قادر بدھ 28 جولائی 2021 08:49

افغانستان میں امن کی خاطر ہم ان کی کڑوی باتیں برداشت کرتے ہیں
کراچی (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار ۔ 28 جولائی 2021ء ) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت نے فیٹف فورم کو اپنے مقاصد کیلیے استعمال کرنے کی کوشش کی لیکن پاکستان کی کارکردگی کی آج دنیا اعتراف کررہی ہے۔ان خیالات کا اظہار وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کراچی میں پیر صاحب کی والدہ کے انتقال پر تعزیت کے بعد کیا، انہوں نے دورہ کراچی کے موقع پر کہا کہ سعودی عرب سے دو طرفہ تعلقات میں بہتر پیشرفت ہوئی ہے، آئندہ دنوں میں سعودی عرب کے ساتھ تعلقات میں وسعت دیکھیں گے۔

انہوں نے بتایا کہ صبح مجھے بحرین جانا ہے وہاں خطے کی موجودہ صورتحال پر پاکستان کا مؤقف پیش کروں گا۔شاہ محمود کا کہنا تھا کہ ہم افغانستان میں امن اور استحکام چاہتے ہیں، ہماری دلچسپی افغانستان کے عوام سے ہے اگر افغان مسئلے کا فوجی حل ہوتا تو 20 سالوں میں نکل چکا ہوتا۔

(جاری ہے)

وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ افغانستان میں امن کی خاطر ہم ان کی کڑوی باتیں برداشت کرتے ہیں مگر کچھ چیزیں برداشت سے باہر ہوتی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ وہاں کے لوگ اپنے مستقبل کے بارے میں پریشان ہیں، افغان نیشنل سیکیورٹی ایڈوائزر نے پاکستان مخالف بیانات دئیے، جو زبان انہوں نے استعمال کی کوئی محب وطن اس کو برداشت نہیں کرسکتا۔ان کا کہنا تھا کہ ہم نے افغانستان کے معاملات میں مداخلت کی نہ کرنا چاہتے ہیں ہم صرف امن چاہتے ہیں، ہمارا مقصد صرف امن ہے۔واضح رہے کہ شاہ محمود قریشی نے دورہ کراچی کے موقع پر پیر پگارا سے ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی تھی، ملاقات کے دوران وزیر خارجہ نے پیر پگارا سے ان کی والدہ کے انتقال پر تعزیت کی اور سیاسی معاملات پر گفتگو کی اور کہا کہ اس گھرانے سے ہمارا پرانا رشتہ ہے۔

Live کابل میں طالبان کا کنٹرول سے متعلق تازہ ترین معلومات