کراچی ملک کا معاشی مرکز ہے ،سرمایہ کاروں کے لیے انتظامی کارروائیوں کو سہل بنایا جائے،وزیراعظم عمران خان

تعمیرات کے شعبے سے روزگار کے مواقع ملیں گے اور کرونا وبا کی وجہ سے معاشی نقصان کے ازالے میں مدد ملے گی، اجلاس سے خطاب

جمعرات اکتوبر 23:32

کراچی ملک کا معاشی مرکز ہے ،سرمایہ کاروں کے لیے انتظامی کارروائیوں ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 29 اکتوبر2020ء) وزیر اعظم عمران خان نے کہاہے کہ کراچی ملک کا معاشی مرکز ہے ،سرمایہ کاروں کے لیے انتظامی کارروائیوں کو سہل بنایا جائے،تعمیرات کے شعبے سے روزگار کے مواقع ملیں گے اور کرونا وبا کی وجہ سے معاشی نقصان کے ازالے میں مدد ملے گی۔جمعرات کو وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت قومی رابطہ کمیٹی برائے ہاؤسنگ, تعمیرات اور ڈیویلپمنٹ کا ہفتہ وار اجلاس ہوا جس میں چیف سیکریٹری سندھ نے اجلاس کو آگاہ کیا کے 17 اپریل 2020 سے آب تک 877 رہائشی اور 10 صعنتی منصوبوں کی تعمیر کے لیے درخواستیں موصول ہوئی ہیں۔

ان میں 363 منصوبوں کی اجازت دی جاچکی ہے جن کا کل تعمیراتی حجم 12 میلین اسکوئیر فٹ بنتا ہے۔ اجلاس کو آگاہ کیا گیا کے صوبہ میں سیمینٹ، سٹیل، ٹائیل اور سیرامیک کی فروخت میں خاطر خواہ آضافہ دیکھا گیا ہے۔

(جاری ہے)

اجلاس کو آگاہ کیا گیا کے کاغذات کی بروقت جانچ پڑتال کے لیے مانیٹرنگ کا آن لائن نظام موجود ہے۔وزیر اعظم نے کہا کہ کراچی ملک کا معاشی مرکز ہے اس لیے تعمیرات کے شعبے میں بھی خاص اہمیت کا حامل ہے۔

چیف سیکریٹری بلوچستان نے آگاہ کیا کہ صوبہ بلوچستان میں کل 1067 کمرشل اور 2033 رہائشی منصوبوں کے لیے درخواستیں موصول ہوئی ہیں جن کی پراسیسنگ کی جارہی ہے۔ چیرمین سی ڈی اے نے اجلاس کو آگاہ کیا کہ سرمایہ کاروں کی سہولت کے لیے آن لائن فیسوں کی ادائیگی کے لیے ون لنک سے معاہدہ طے پا چکا ہے۔ پراپرٹی کے دستاویزات کو ڈیجیٹائز کیا جا رہا ہے۔ اجلاس کو اسلام آباد میں جاری تجاوزات کے خلاف مہم کے بارے آگاہ کیا گیا۔وزیر اعظم نے اس بات پر زور دیا کہ تعمیرات کے شعبے سے روزگار کے مواقع ملیں گے اور کرونا وبا کی وجہ سے معاشی نقصان کے ازالے میں مدد ملے گی۔وزیر اعظم نے ہدایت کی کہ سرمایہ کاروں کے لیے انتظامی کارروائیوں کو سہل بنایا جائے۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments