پیپلز پارٹی مادر جمہوریت بیگم نصرت بھٹو کا یوم وفات (کل)عقیدت و احترام سے منائے گی

ملک بھر میں پارٹی کے مرکزی صوبائی ڈویژنل ضلعی شہری دفاتر میں مادر جمہوریت کی مغفرت کیلئے دعائیہ تقاریب منعقد ہونگی ، نیئر بخاری

ہفتہ 23 اکتوبر 2021 00:08

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 22 اکتوبر2021ء) پاکستان پیپلز پارٹی کے سیکرٹری جنرل سید نیر حسین بخاری نے مادر جمہوریت بیگم نصرت بھٹو کے یوم وفات پر پیغام میں انہیں شاندار الفاظ میں خارج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہاہے کہ پاکستان پیپلز پارٹی مادر جمہوریت بیگم نصرت بھٹو کا یوم وفات 23اکتوبر عقیدت و احترام سے منائے گی، ملک بھر میں پارٹی کے مرکزی صوبائی ڈویژنل ضلعی شہری دفاتر میں مادر جمہوریت کی مغفرت کیلئے دعائیہ تقاریب منعقد ہونگی نیر بخاری نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی کے کارکن اور جمہوریت پسند قوتیں بانی و قائد تحریک بحالی جمہوریت بیگم نصرت کو خراج عقیدت پیش کرینگی نیر بخاری نے کہا کہ مادر جمہوریت بیگم نصرت بھٹو نے سیاہ دور میں جمہوریت کء شمع روشن رکھی بیگم نصرت بھٹو نے قومی جمہوری راہنما کے طور پرتحریک بحالی جمہوریت کء قیادت کی ۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ وقت کے آمر کا ڈٹ کر مقابلہ کیا اور جمہوریت کی بحالی کیلئے مردانہ وار جدوجہد کی ۔ انہوںنے کہا کہ مادر جمہوریت نے آمریت کا مردانہ وار مقابلہ کرتے ہوئے سر پر لاٹھیاں کھائیں اور جمہوریت کیلئے خون دیا جمہور کے بینادی حقوق کی بازیابی کیلئے مثالی جدوجہد کی تاریخ رقم کی ۔نیر بخاری نے کہا کہ بیگم نصرت بھٹو آئین شکنوں اور جمہوریت دشمنوں کے خلاف میدان عمل میں نکلیں تھیں مادر جمہوریت بیگم نصرت بھٹو نے جمہوریت پر شبخون نامنظور کا نعرہ بلند کیا تھا مادر جمہوریت بیگم نصرت بھٹو نے غاصب ٹولے کے خلاف جمہوری قوتوں کو یکجا کیا ۔

نیر بخاری نے کہا کہ بیگم نصرت بھٹو کو جمہور کے حقوق اور بحالی جمہوریت کی خاطر دلیرانہ جدوجہد پر جمہوریت پسندوں کیطرف سے مادر جمہوریت کے خطاب سے نوازاگیا ۔انہوںنے کہا کہ تاریخ پاکستان گواہ ہے کہ جہموریت کے لئے سب سے زیادہ قربانیاں بھٹو خاندان اور پیپلزپارٹی کے کارکنوں نے دی ہیں ۔نیر بخاری نے کہا کہ ہم آئین کی بالادستی اور پارلیمنٹ کی عزت و توقیر کے مشن پر قائم رہنے کا عہد کرتے ہیں آئین کی بالادستی قانون کی حکمرانی پارلیمنٹ کی توقیر کے لئے جدوجہد جاری رکھیں گے۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments