پاکستان میں پہلے اسٹیٹ آف دی آرٹ موبائل فون اسمبلی پلانٹ کا آغاز کر دیا گیا

لاہور میں پاکستان کے پہلے اسٹیٹ آف دی آرٹ موبائل فون اسمبلی پلانٹ کا آغاز کر دیا گیا جہاں ماہانہ نو سے دس لاکھ مختلف کمپنیز کے فونز اسمبل ہوتے ہیں، ذرائع

Danish Ahmad Ansari دانش احمد انصاری اتوار 20 جون 2021 20:14

پاکستان میں پہلے اسٹیٹ آف دی آرٹ موبائل فون اسمبلی پلانٹ کا آغاز ..
لاہور(اُردو پوائنٹ، اخبار تازہ ترین، 20جون 2021۔) حکومت کی نئی معاشی پالیسی سرمایہ کاروں کا اعتماد بحال کرنے میں کامیاب، پاکستان میں پہلے اسٹیٹ آف دی آرٹ موبائل فون اسمبلی پلانٹ کا آغاز کر دیا گیا، پلانٹ میں ماہانہ 10لاکھ سمارٹ فونز تیار ہوں گے۔ تفصیلات کے مطابق لاہور میں پاکستان کے پہلے اسٹیٹ آف دی آرٹ موبائل فون اسمبلی پلانٹ کا آغاز کر دیا گیا جہاں ماہانہ نو سے دس لاکھ مختلف کمپنیز کے فونز اسمبل ہوتے ہیں۔

کوٹ لکھ پت انڈسٹریل ایریا میں قائم ایئر لنک نامی نجی کمپنی کے یونٹ میں تین مختلف کمپنیز کے موبائل فونز اسمبل ہو رہے ہیں۔طویل اسمبلی لائنز کے اطراف موجود سینکڑوں ورکرز ، ماہانہ نو سے دس لاکھ موبائل فونز اسمبل کرتے ہیں۔اسمبلنگ کے بعد فون کو سخت ترین ٹیکنیکل ٹیسٹ سے بھی گزارا جاتا ہے ۔

(جاری ہے)

مقامی سطح پر تیاری کے بعد 15 سے اٹھارہ ہزار تک ملنے والا فون تہتر سو روپے میں تیار ہو گا۔

گزشتہ مالی سال کے دوران موبائل فونز کی درآمدات پر ایک ارب اکتیس کروڑ دس لاکھ ڈالرز کا زرمبادلہ خرچ ہوا۔حکومتی پالیسی میں نرمی اور غیر ملکی کمپنیوں کی موبائل فون صنعت میں سرمایہ کاری سے اربوں روپے کا درآمدی بل کم ہو گا۔پلانٹ میں سات اسمبلی لائینز ہیں جبکہ سات سو سے زائد ورکرز مکتلف شفٹوں میں کام کرتے ہیں۔پاکستان میں بڑھتی سمارٹ فونز کی کھپت اور ود ہولڈنگ ٹیکس میں چھوٹ سے مقامی سطح پر فونز کی تیاری ہو گی۔

جس سے روزگار کے مواقع میسر آئیں گے ۔واضح رہے کہ حکومت کی اپنی معاشی پالیسی کے ذریعے بیرونی سرمایہ کاروں کا اعتماد بحال کرنے میں بہت بڑی کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ پاکستان میں رواں مالی سال میں بیرونی سرمایہ کاری میں 107فیصد کا ریکارڈ اضافہ ہوا ۔ملک میں براہ راست سرمایہ کاری میں کمی دیکھنے میں آئی ہے۔ رواں مالی سال کے پہلے گیارہ ماہ کے دوران مجموعی بیرونی سرمایہ کاری میں 107فیصد اضافہ ہوا جب کہ براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری میں 28فیصد کی کمی ریکارڈکی گئی ۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق مئی میں بیرونی سرمایہ کاروں نے ملکی نجی شعبے میں براہ راست 19 کروڑ 83 لاکھ ڈالر کی سرمایہ کاری کی جب کہ اسٹاک مارکیٹ سے 48 لاکھ ڈالر اور ملکی سرکاری شعبے سے 52 لاکھ ڈالر نکالے گئے ،یوں مئی میں مجموعی بیرونی سرمایہ کاری کا حجم 18 کروڑ 83 لاکھ ڈالر رہا۔

لاہور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments