جنرل بپن راوت کا بیان ہماری اخلاقی فتح ہے،سیدعلی گیلانی

بھارتی پولیس نے یاسین ملک کو کنگن سے گرفتار کرلیا

منگل اپریل 18:12

سرینگر ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 اپریل2018ء) مقبوضہ کشمیرمیں کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین سیدعلی گیلانی نے کہاہے کہ بھارتی فوج کے سربراہ جنرل بپن راوت کاحالیہ بیان اس بات کا اعتراف ہے کہ بھارت ظالمانہ ہتھکنڈوں اور مسلسل قتل عام کے ذریعے کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو کمزور نہیں کر سکتا ہے ۔کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق سیدعلی گیلانی نے جنرل راوت کے بیان کاجس میں انہوںنے اعتراف کیا تھا کہ بھارتی فوج مقبوضہ علاقے میں اپنا مقصد حاصل نہیںکرسکتی، حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ بھارتی آرمی چیف کا بیان کشمیریوں کی اخلاقی فتح ہے۔

انہوںنے کہاکہ عوام کی اپنے سیاسی مستقبل کے بارے میں خواہشات کو صرف استصوات رائے کے ذریعے ہی جانچاجاسکتا ہے ۔ جموں وکشمیر کے تینوں خطوں لداخ ، جموں اور وادی کشمیرمیں کٹھوعہ کی ننھی بچی آصفہ کی بے حرمتی اور قتل کے افسوسناک واقعے کے خلاف احتجاجی مظاہرے جاری رہے ۔

(جاری ہے)

لداخ کے علاقے کارگل میں بھی شدید غم و غصہ پایا جاتا ہے جہاںہزاروں لوگوںنے امام خمینی ٹرسٹ کے زیر اہتمام ایک احتجاجی ریلی میں شرکت کی ۔

بھارتی فوجیوںنے احتجاج کرنے والے ڈگری کالج سوپور کے طلباء کو منتشر کرنے کیلئے آنسو گیس کا بے دریغ استعمال کیا جس کے بعد فوجیوں اور طلباء کے درمیان جھڑپیں ہوئیں۔ بارہمولہ میںپولیس نے طالبا ت پر آنسو گیس اور پانی کی بوچھاڑ کی ۔ جموںوکشمیرمسلم کانفرنس کے چیئرمین شبیراحمدڈار نے انسانی حقوق کے کارکن محمد احسن اونتو کے ہمراہ سرینگر میں کل جماعتی حریت کانفرنس کے سینئر رہنماء اور تحریک حریت جموںوکشمیر کے چیئرمین محمد اشرف صحرائی سے ملاقات کی۔

حریت رہنمائوں نے کٹھوعہ کی آصفہ کی بے حرمتی اورقتل کے واقعے کی بین الاقوامی تحقیقاتی ادارے سے تحقیقات کرانے کا مطالبہ کیا۔ بھارتی پولیس نے جموںو کشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین محمد یاسین ملک کوپارٹی رہنماء بشیر احمد کشمیر ی کے ہمراہ آج کنگن سے گرفتار کرلیا۔ محمد یاسین ملک نے گرفتاری سے قبل کنگن میں ایک مظاہرے کی قیادت کی اور عوامی اجتماع سے خطاب کیا ۔

ادھر لندن میں دولت مشترکہ کے سربراہ اجلاس کے موقع پر برطانوی خواتین اور بچوں نے پارلیمنٹ کے باہر جمع ہو کر مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کے خلاف مظاہرہ کیا۔ کشمیری خواتین رہنمائوں آسیہ اندرابی اور زمردہ حبیب نے سرینگر سے شرکاء سے ٹیلی فونک خطاب کیا۔ لبریشن فرنٹ لندن کے رہنما پرو فیسر ظفر خان نے دولت مشترکہ کے رکن ممالک کے سربراہان کے نام ایک مراسلے میں تنازعہ کشمیر کے حل کیلئے بھارت ، پاکستان اور کشمیریوں کے درمیان ثالثی کیلئے ایک پینل تشکیل دینے پر زوردیا۔

امریکی روزنامے نیویارک ٹائمز نے اپنے اداریہ میں آٹھ سالہ کشمیری بچی آصفہ کی بے حرمتی اور قتل کے اندوہناک واقعے پر بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کے بے رحمانہ رویے پر شدیدتنقید کی ہے ۔ ’’بھارت میں خواتین پر حملے اور نریندر مودی کی طویل خاموشی ‘‘کے عنوان سے اداریے میں کہاگیا ہے کہ بھارتی وزیر اعظم اکثر ٹویٹر پر پیغامات جاری کرتے رہتے ہیں اور خود کو فن تقرر کا ماہر سمجھتے ہیں تاہم انہوںنے اپنی جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی سے وابستہ فرقہ پرست قوتوں کی طرف سے خواتین اور اقلیتوںکو درپیش خطرات پر آوازبلند نہیں کی ۔

متعلقہ عنوان :