پرویز مشرف پر4ہزار پاکستانی غیرملکیوں کے حوالے کرنے کا الزام بے بنیاد ہے،ڈاکٹر محمد امجد

پرویز مشرف اپنی کتاب میں وضاحت کرچکے ہیں کہ صرف القائدہ کے 369غیرملکی جنگجو امریکہ کو دئیے گئے تھے،ردعمل

منگل اپریل 19:35

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 اپریل2018ء) آل پاکستان مسلم لیگ کے صدر ڈاکٹر محمد امجدنے کہا ہے کہ سید پرویز مشرف نے اپنے دوراقتدار میں کوئی بھی پاکستانی غیرملکیوں کے حوالے نہیں کیا۔ لاپتہ افراد سید پرویز مشرف کے کھاتے میں ڈال دینا مناسب نہیں ۔سید پرویز مشرف اپنی کتاب میں واضح کرچکے ہیں کہ اس دور میں القائدہ سے تعلق رکھنے والے غیرملکی جنگجو امریکہ کے حوالے کئے گئے تھے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے قومی اسمبلی قائمہ کمیٹی برائے انسانی حقوق کے اجلاس میں دئیے گئے اس بیان کے ردعمل میں کیا جس میں سید پرویز مشرف پرچار ہزار پاکستانی، غیرملکیوں کوفروخت کرنے کا الزام لگایا گیاہے۔۔ڈاکٹر محمد امجد نے وضاحت کی کہ سید پرویز مشرف نے اپنے دور حکومت میں کوئی بھی پاکستانی غیرملکیوں کو فروخت نہیں کیا۔

(جاری ہے)

سید پرویز مشرف پر لگایا گیا الزام بے بنیاد ہے۔

انہوں نے کہا کہ سید پرویز مشرف نے اپنی کتاب میں واضح طور پر لکھا ہے کہ ان کے دور میں القائدہ سے تعلق رکھنے والی369وہ غیر ملکی جنگجو امریکہ کے حوالے کئے گئے تھے جو دہشت گردی کی کاروائیاں کرنے کے لئے افغانستان سے سرحد پار کر کے پاکستان آئے تھے۔انہوں نے کہا کہ پاکستانی لاپتہ افراد کی گمشدگی کا سید پرویز مشرف سے کوئی تعلق نہیں ہے۔اجلاس میں پاکستانی لاپتہ افراد سید پرویز مشرف کے کھاتے میں ڈال دئیے گئے ہیںجو حقائق کے برعکس ہے۔

متعلقہ عنوان :