افغانستان، بم دھماکہ، بارڈر ریپڈ ری ایکشن فورس کے کمانڈر سمیت 5افراد ہلاک ،طالبان نے ذمہ داری قبول کرلی

قندھار شہر میں ہونے والے بم حملے میں کمانڈر کرنل جانان ماما، ان کے تین باڈی گارڈز اور ایک عام شہری ہلاک ہوئے،بم گاڑی میں نصب کیا گیا تھا،ترجمان صوبائی پولیس ضیاء درانی

بدھ اپریل 18:44

کابل(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 اپریل2018ء) افغان صوبے قندھار میں بم دھماکے میں بارڈر ریپڈ ری ایکشن فورس کے کمانڈر سمیت 5افراد ہلاک ہو گئے،،طالبان نے حملے کی ذمہ داری قبول کرلی۔ غیر ملکی میڈیا کے مطابق افغانستان کے جنوبی صوبے قندھار میں ہونے والے ایک بم دھماکے کی زد میں آ کر پولیس کے ایک کمانڈر سمیت پانچ افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

(جاری ہے)

قندھار پولیس کے ترجمان ضیائدرانی کا کہنا ہے کہ قندھار شہر میں ہونے والے اس بم دھماکے کے نتیجے میں افغانستان کی بارڈر ریپڈ ری ایکشن فورس کے کمانڈر کرنل جانان ماما، ان کے تین باڈی گارڈز اور ایک عام شہری ہلاک ہوئے۔ درانی کے مطابق ہلاک ہونے والے کمانڈر کی موٹر کار کے ساتھ بم منسلک کیا گیا تھا۔ اس حملے کی ذمہ داری طالبان نے قبول کر لی ہے۔