ٹیلی نار نے موٹر سائیکلسٹ زینتھ عرفان کی زندگی پر مبنی ایڈونچر فلم ’موٹر سائیکل گرل‘ نمائش کے لیے پیش کردی

جمعہ اپریل 17:36

ٹیلی نار نے موٹر سائیکلسٹ زینتھ عرفان کی زندگی پر مبنی ایڈونچر فلم ..
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 اپریل2018ء) پاکستان کے شمالی علاقہ جات کا تن تنہا سفر کرنے والی اولین خاتون موٹر سائیکلسٹ زینتھ عرفان کی کامیابیوں پر مبنی فلم ’موٹر سائیکل گرل‘ کراچی میں نمائش کے لیے پیش کی گئی۔ ایک خاتون کے معاشرے کے دقیانوسی تصورات کو رد کرنے والے کارنامے کے گرد گھومتی یہ فلم ٹیلی نار کے ’معاشروں کو بااختیار بنانے‘ کے برانڈ فلسفے سے مکمل طور پر ہم آہنگ ہے ، جس کا مقصد لوگوں کوان کی شخصیت کے بہتر رُخ کو سامنے لانے میں مدد فراہم کرنا ہے ۔

فلم میں اکیس سالہ زینتھ عرفان کی کہانی دکھائی گئی ہے جو معاشرتی رسوم ورواج کی بندشیں توڑ کر موٹرسائیکل پر پاکستان کے شمالی علاقوں کے سفر پر تنہا نکل پڑتی ہے تاکہ اپنے مرحوم والد کے موٹر سائیکل پر خنجراب پاس تک سفر کے ادھورے خواب کو پورا کرسکے۔

(جاری ہے)

زینتھ کی بہادری اور عزم اُسے ایک ایسا دشوار سفر کرنے کی ہمت دیتے ہیں جس میں درپیش مشکلات کے باعث عام طور پر مرد بھی اس سے کتراتے ہیں۔

زینتھ یہ سنگ میل حاصل کرنے والی اولین پاکستانی خاتون ہیں۔ سہائی علی ابڑو اور علی کاظمی نے اس فلم کے مرکزی کردار نبھائے ہیں جبکہ بائیوپک فلم ’شاہ‘ سے شہرت پانے والے باصلاحیت نوجوان پاکستانی اداکار، ہدایت کار،، موسیقار ، سکرین رائٹر اور پروڈیوسر عدنان سرور نے فلم کی کہانی لکھی ہے اور فلم کے ہدایت کار اور معاون پروڈیوسر بھی ہیں۔

یہ عدنان سرور کے ’ہیروز‘ فلموں کے سلسلے کی دوسری فلم ہے جس میں ایک اور پاکستانی ہیرو کی حقیقی کہانی بڑی سکرین کی زینت بنائی گئی ہے۔ ٹیلی نار پاکستان کے سرکل ساؤتھ کے نائب صدر، عمیر محسن نے اس متعلق اظہار ِ خیال کرتے ہوئے کہا: ’’ٹیلی نار لوگوں کی انفردی خود مختاری کا علمبردار ہے۔ٹیلی نار ڈیٹا کی طاقت سے پاکستانیوں کو بااختیار بنانا چاہتا ہے تاکہ وہ زیادہ کامیاب ہوں اور اپنی شخصیت کی بہتر جہت کو سامنے لاسکیں۔

زینتھ کی کہانی ایک جاندار آواز ہے جو مزید جدوجہد کرنے اور زیادہ کامیابی حاصل کرنے کے ہمارے برانڈ فلسفے سے مکمل طور پر ہم آہنگ ہے۔ جس طرح زینتھ نے تمام مشکلات کے باوجود غیر متزلزل قوت اور ثابت قدمی سے اپنے والد کے ادھورے خواب کو تعبیر دی ہے ، وہ تمام پاکستانیوں کے لیے ایک شاندار مثال ہے کہ کیسے اپنے دل کی آواز سنتے ہوئے اپنی ذات کے بل بوتے پر کارنامے انجام دیے جاسکتے ہیں۔

یہی ٹیلی نار کا نظریہ ہے اور اپنے ڈیٹا کے ذریعے ٹیلی نار اس سفر میں اپنے صارفین کو بااختیار بنانے کے لیے کوشاں ہے۔‘‘فلم کے ڈائریکٹر عدنان سرور کا کہنا تھا: ’’یہ فلم زینتھ کی حقیقی کہانی پر مبنی ہے کہ کیسے اس نے شدید مزاحمت اور مشکلات کے باوجود اپنی اصل منزل حاصل کی۔ یہ کہانی ہمارے معاشرے کی ہر لڑکی کو درپیش مشکلات کی عکاسی کرتی ہے۔

یہ فلم اس لیے بھی اہم ہے کہ اتنی چھوٹی عمر میں زینتھ ایسے کارنامے انجام دے رہی ہیں جو ہمارے معاشرتی نظام کی گہرائیوں تک سرایت کرنے والے دقیانوسی تصورات کو رد کرتے ہیں۔ ‘‘’موٹر سائیکل گرل‘ کو شائقین سے شاندار پذیرائی اور مثبت رائے عامہ حاصل ہوئی۔ فلم 20اپریل2018سے کراچی ، لاہور اور اسلام آباد سمیت دیگر شہروں کے مرکزی سینما گھروں میں نمائش کے لیے پیش کی جائے گی۔