بھارت،جج لویا معاملہ پر کانگریس کی بدنیتی سپریم کورٹ نے واضح کر دی، آدتیہ ناتھ یوگی

راہول گاندھی عوام سے معافی مانگنیں،انگریس حکومت مخالف سوچ ابھارنا چاہتی ہے، وزیر اعلیٰ اتر پردیش

جمعہ اپریل 21:47

لکھنو(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 اپریل2018ء) بھارتی ریاست اتر پردیش کے وزیر اعلیٰ آدتیہ ناتھ یوگی نے کہا ہے کہجج لویا معاملے میں سپریم کورٹ کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہیں، کانگریس کی بدنیتی ابھر کر سامنے آگئی ، راہول گاندھی کو عوام سے معافی مانگنی چاہئے،کانگریس حکومت مخالف سوچ ابھارنا چاہتی ہے۔۔بھارتی میڈیا کے مطابق بھارتی ریاست اتر پردیش کے وزیر اعلیٰ آدتیہ ناتھ یوگی نے کہا ہے کہ جج لویا معاملے میں سپریم کورٹ کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہیں۔

اس معاملے میں کانگریس کی بدنیتی ابھر کر سامنے آگئی ہے اور اس کیلئے کانگریس کے صدر راہول گاندھی کو عوام سے معافی مانگنی چاہئے۔ یوگی نے کہا کہ کانگریس نے ملک میں ایسا ماحول بنانے کی کوشش کی ہے جس سے حکومت کے تئیں لوگوں میں منفی سوچ پیدا ہو۔

(جاری ہے)

عدالت عظمیٰ نے تمام شکوک و شبہات دور کردیئے۔ یہ کانگریس کی سازش کا انکشاف ہے۔ واضح ہو کہ عدالت عظمیٰ نے مرکزی تفتیشی ایجنسی ( سی بی آئی) کے اسپیشل جج بی ایچ لویا کی موت کے کیس کی آزادانہ تحقیقات کی تمام درخواستیں مستر کردیں۔۔چیف جسٹس دیپک مشرا ، جسٹس اے ایم کھانولکر اور جسٹس ڈی وائی چندر چوڑ پر مشتمل بنچ نے یہ کہتے ہوئے اپیل خارج کردی کہ لویا موت کیس کی آزادانہ جانچ کی مانگ کرنے والی ان درخواستوں کی کوئی اہمیت نہیں۔