بھارتی مقبوضہ کشمیر کے عوام کو بھارتی ظلم و ستم سے نجات دلانے کے لئے دنیا کچھ نہیں کر رہی،رانا بشارت علی خان

پیر اپریل 17:40

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 اپریل2018ء) عالمی تحریک انسانی حقوق برطانیہ کے پاکستانی نژاد صدر رانا بشارت علی خان نے بھارتی مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی افواج کے ہاتھوں نہتے کشمیری عوام پر آگ و بارود کی برسات کا سلسلہ ختم نہ کئے جانے پر انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیر میں حق رائے دہی کے لئے جدوجہد کرنے والے کشمیری عوام پر ہونے والے مظالم پر انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں کا رویہ معاندانہ ہی․ کشمیر کی آزادی کی جنگ صرف کشمیر کے نہتے عوام لڑ رہے ہیں جبکہ کشمیری قیادت مصلحتوں کا شکار ہوچکی ہی․ کشمیر کے عوام کو بھارتی درندوں کے رحم و کرم پر چھوڑ کر کشمیری لیڈران صرف ذاتی سیاست چمکا رہے ہیں․ عالمی تحریک انسانی حقوق برطانیہ کے صدر رانا بشارت علی خان نے کہا کہ کشمیری لیڈروں کی مصالحت پسندانہ سیاست کی وجہ سے دنیا کی تنظمیوں نے بھی کشمیری عوام کے حق رائے دہی کے مطالبے پر آنکھیں بند کر رکھی ہیں․ کشمیر کی تحریک آزادی کے نام پر ذاتی مفادات اور دنیا کے سیر سپاٹوں میں مصروف کشمیری لیڈران امریکہ،، یوروپ اور دنیا کے ممالک کے دورے کر کے ذاتی سیاست چمکا رہے ہیں․ کشمیر کے عوام کے مطالبات کو اقوام متحدہ نے بھی تسلیم کیا اور اپنی قراردادوں میں تسلیم کیا کہ کشمیر کا مسئلہ اقوام متحدہ کی قراردادوں کی روشنی میں حل کیا جائے اور بھارتی قابض حکمرانوں کو پابند کیا کہ مقبوضہ کشمیر کے عوام کو اس بات کا حق دیا جائے کہ وہ اپنی ریاست کے لئے کس حیثیت کا انتخاب کرتے ہیں․ رانا بشارت علی خان نے کہا کہ اقوام متحدہ سمیت دنیا کی تمام تنظیمیں کشمیر کے عوام پر ہونے والے ظلم و ستم پر توجہ دیں اور کشمیر کے نہتے شہریوں، عورتوں ، بچوں اور بوڑھوں پر اسلحے کے استعمال کا راستہ روک کر بھارتی قابض افواج اور بھارتی حکومت کو اقوام متحدہ کی قراردادوں پر عمل یقینی بنائیں․ کشمیر کے عوام پر ظلم و ستم کے سلسلے کا نہ روکا گیا تو بھارتی ظلم کے ستائے ہوئے عوام کا اقوام متحدہ سمیت عالمی اداروں پر اعتماد ختم ہوجائے گا۔