صوبائی و زیر خلیل طا ہرسند ھو سیالکوٹ میں تیزاب گردی کا نشانہ بننے والی عاصمہ یعقوب کے گھر گئے ،حکومت کی جانب سی5لاکھ روپے کی امداد کے ساتھ مقدمہ کیلئے قانونی ٹیم کی مفت فراہمی کا اعلان کیا

منگل اپریل 23:20

سیالکوٹ۔24 اپریل(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 اپریل2018ء) صوبائی و زیر برا ئے انسانی حقوق و اقلیتی امور خلیل طا ہرسند ھو نے سیالکوٹ میں عاصمہ یعقوب نامی لڑکی کی رہائش گاہ کا دورہ کیا جو 17اپریل کو تیزاب گردی کا نشانہ بنی اور بالآخر 22اپریل کو اپنی زندگی کی بازی ہار گئی۔صوبائی وزیر نے ایم پی اے ذوالفقار غوری ، اے سی سیالکوٹ شاہد عباس اور مقامی پولیس حکام کے ہمراہ عاصمہ یعقوب کے والد یعقوب مسیح سے ملاقات کی اور انہیں پنجاب حکومت کی جانب سی5لاکھ روپے کی امداد کے ساتھ مقدمہ کیلئے قانونی ٹیم کی مفت فراہمی کا اعلان کیا۔

عاصمہ کے والد یعقوب مسیح نے صوبائی وزیر کو بتایا کہ وہ میونسل کارپوریشن میں ایک سینٹری ورکر کی نوکری کرتا ہے اور اس کی11بچے ہیں جبکہ اس کی24سالہ بیٹی عاصمہ یعقوب کسی کے گھر کام کرتی تھی ،رضوان گجر نامی شخص نے اسکا رشتہ مانگا اور انکار پر عاصمہ پر تیزاب پھینک کر موقع سے فرار ہوگیا،عاصمہ کو فوری نزدیکی ہسپتال لایا گیا،جسم کا 90فیصد حصہ جھلس جانے کے باعث میو ہسپتال لاہور منتقل کیا گیااور 22اپریل عاصمہ اپنی زندگی کی بازی ہار گئی، پولیس حکام نے صوبائی وزیر کو بتایا کہ ایف آئی آر کا اندراج کرکے مقدمہ میں دہشتگردی کی دفعات شامل کرکے ملزم کو گرفتار کیا جا چکا ہے اور کل انسداد دہشت گردی کورٹ گوجرانوالہ میں ملزم کو پیش کرکے جسمانی ریمانڈ حاصل کیا جائے گا۔

(جاری ہے)

صوبائی وزیر خلیل طاہر سندھو نے میڈیا نمائندگان سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کے دور اقتدار میں اقلیتوں کیلئے بے شمار اقدامات کیئے گئے ہیں اور ہر سطح پر خواتین کے ساتھ بچوں کے حقوق کا تحفظ یقینی بنایا گیا ہے۔عاصمہ کو ہم واپس تو نہیں لا سکتے مگر عوام کے ساتھ ملکر مزید کسی عاصمہ کو ایسی درندگی کا شکار ہونے سے بچا سکتے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ملزمان کتنے ہی با اثر کیوں نہ ہو ں ،قانون کی گرفت سے نہیں بچ سکتے اور متاثرہ خاندان کے ساتھ انصاف کے تمام تر تقاضوں کو یقینی بنایا جائیگا۔صوبائی وزیر نے عاصمہ کے اہلخانہ سے تعزیت کے بعد خصوصی دعا بھی کروائی ۔ اس موقع پر ممبر تحصیل کونس سیالکوٹ بلقیس رانی، چیئرمین کرسچن تھنکرز فورم جاوید گُل، کونسلر ندیم سہوترہ ، کونسلر آشر کنول اور باؤ عمران بھی موجود تھے ۔