مزدور اور ورکر کلاس کسی بھی ملک کا اہم سرمایہ ہوتے ہیں ‘

مزدوروں اور ورکر کلاس کی خوشحالی کے بغیر ملک کی ترقی و خوشحالی کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں ہو سکتا وفاقی وزیر چوہدری محمد برجیس طاہر کا یو م مئی کے حوالے سے بیان

پیر اپریل 16:30

مزدور اور ورکر کلاس کسی بھی ملک کا اہم سرمایہ ہوتے ہیں ‘
اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 اپریل2018ء) وفاقی وزیر برائے امور کشمیر و گلگت بلتستان چوہدری محمد برجیس طاہر نے کہا ہے کہ مزدور اور ورکر کلاس کسی بھی ملک کا اہم سرمایہ ہوتے ہیں اور مزدوروں اور ورکر کلاس کی خوشحالی کے بغیر ملک کی ترقی و خوشحالی کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں ہو سکتا۔یو م مئی کے حوالہ سے ایک بیان میںشکاگو کے مزدوروں کی قربانیوں کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ پچھلی صدی دنیا میں مزدور اور ورکر کلاس کے حقوق کی آگاہی کے حوالہ سے بڑی اہم ثابت ہوئی۔

انہوں نے کہا کہ جمہوریت اور مزدوروں کے حقوق کا ایک مضبوط رشتہ ہے ا ور ورکر کلاس کے حقوق کو جمہوری نظام میں تقویت ملتی ہے۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ مزدوروں اور ورکر کلاس کے حقوق کے حوالہ سے مسلم لیگ (ن) نے بڑا اہم کردار ادا کیا ہے اور حکومت پنجاب نے 2015ء مزدوروں کے حقوق کے تحفظ کے حوالہ سے 2015ء میں پہلی لیبر پالیسی کا اعلان کیا۔

(جاری ہے)

اس کے علاوہ صوبے میں قائم انڈسٹریل اسٹیس اور نئے قائم ہونے والے انڈسٹریل زوننر اور اکنامک زوننر میں بھی مزدوروں کے حقوق اور فلاح و بہبود کے حوالے سے بھی سہولیات کی فراہمی پر بھرپور توجہ دی گئی۔

انہوں نے کہا کہ حکومت پنجاب نے محمد شہباز شریف کی سربراہی میں صوبہ میں مختلف بھٹوں، ہوٹلز، پیٹرول پمپس اور ورکشاپز پر کام کرنے والے ہزاروں بچوں کو چائلڈ لیبرکی لعنت سے چھٹکارا دلوا کر سکولوں میں داخل کرائے۔ انہوں نے کہا کہ ورکر کلاس کو ہنر مند بنانے کیلئے صوبہ میں تقریباً سو سے زائد پولی ٹیکنیک ادارے موجود ہیں جہاں بے روزگار نوجوانوں کو ہنر سکھایا جا رہا ہے تاکہ وہ ملک کے مفید شہری بن سکیں۔

وفاقی وزیر نے محمد نواز شریف کے وژن کے تحت بننے والے سی پیک منصوبے کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اس میگا منصوبے کے تحت ملک میں 60 ارب ڈالر سے زائد کی سرمایہ کاری کی جا رہی ہے جس کے نتیجہ میں تقریباً 25 لاکھ نئی ملازمیتں پیدا ہوں گی جس سے بے روزگاری کا خاتمہ ممکن ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ ہماری حکومت جب سے اقتدار میں آئی ہے اس نے ترجیجی بنیادوں پر صنعتوں اور فیکٹریوں کو گیس اور بجلی کی لوڈ شیڈنگ سے مسثتنٰی قرار دیا تاکہ ان فیکٹریوں اور صنعتوں میں کام کرنے والے مزدور بے روزگارنہ ہوں۔

انہوں نے کہاکہ آج پاکستان کے مزدور اس بات کی خود گواہی دیں گے کہ سابقہ حکومت کے دور میں ملک میں ہر طرف اندھیرا اور بے روزگاری عروج پر تھی لیکن جب سے ہمارے قائد کی پارٹی اقتدار میں آئی تو انہوں نے سب سے پہلے ترجیجی بنیادوں پر توانائی کے منصوبوں پر کام شروع کیا تاکہ پاکستان کے عوام کے روزگار کو یقینی بنایا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ ہماری حکومت نے اپنے غریب مزدورں کو ہر ممکن سہولت دینے کی بھرپور کوشش کی ہے اور آئندہ بھی جب موقع ملے گا تو ہماری حکومت پہلے سے زیادہ اپنے ان بھائیوں کیلئے کام کریں گے۔