پشاور میں تین کارخانے اور کوہاٹ میں جنرل سٹور سربمہر، ایک کو پچھتر ہزار جرمانہ

جمعہ مئی 23:33

پشاور۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 مئی2018ء) خیبرپختونخوا فوڈ سیفٹی اینڈ حلال فوڈ اتھارٹی نے جمعرات کو کاروائی کرتے ہوئے تین مصالحے کی فیکٹریاں اور ایک جنرل سٹور کو سربمہر کردیا۔ ترجمان کے پی فوڈ اتھارٹی عطاللہ خان کے مطابق پشاور کے ٹان ٹو میں کاروائی کرتے ہوئے اسسٹنٹ ڈائریکٹر انیلہ محبوب نے تین مصالحے تیار کرنے والے تین کارخانوں پر چھاپہ مارکر سیل کردیا۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ تینوں فیکٹریوں میں بوسیدہ لال مرچ اور لہسن پایا گیا جسے مصالحوں کی تیاری میں استعمال کیا جاتا تھا، ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ مارکیٹ سے ذائدالمیعاد مصالحے فیکٹری لاکر اسے دوبارہ نئے مصالحوں کی تیاری میں استعمال کیا جاتا تھا جس کے بعد فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نے متعلقہ تینوں فیکٹریوں کو سیل کردیا جبکہ ایک کو ناقص صفائی پر پچھتر ہزار کا جرمانہ تھمادیا۔

(جاری ہے)

دوسری جانب کوہاٹ میں فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نے کاروائی کرتے ہوئے وارننگ نوٹسز کے بار بار اجرا کے باوجود عملدرآمد نہ کرنے پر ایک جنرل سٹور کوسیل کردیا ۔ ترجمان کے پی فوڈ اتھارٹی کا یہ بھی کہنا تھا کہ سوات میں ضلعی انتظامیہ سمیت ٹریڈ یونین اور تاجر برادری کی دیگر تنظیموں کے ساتھ ملاقاتیں ہوئیں۔ ملاقاتوں میں فوڈ اتھارٹی کے ساتھ ممکنہ تعاون بڑھانے پراتفاق کیا گیا۔