نواز شریف کے انٹرویو میںبہت ساری زیب داستان کو جمع کیا جارہا ہے،نوازشریف بارہا کہہ چکے ہیں ہمیں اپنا گھر صاف کرنا چاہئے،پاکستان میں دہشت گردی میں نوے فیصد کمی ہو گئی اور ہلاکتیں کم ہوئیں ‘دہشت گردی کے خلاف کامیابی دشمنوں کی آنکھوں میں کھٹھک رہی ہے‘ہمیں دنیا کو بتاناہے کہ افواج پاکستان نے کس طرح دہشت گردی پر قابوپایا‘نوازشریف کے بیان پر میڈیا احتیاط کرے اچھل کر نوازشریف پر الزامات لگائے جارہے ہیں‘بھارت کا میڈیا یہی چاہتا ہے کہ سیاسی لیڈران کو بدنام کیاجائے اسلئے احتیاط کی جائے‘ملک میں 126دن کا دھرنا کیوں ہوا اس کا جواب ملنا چاہئے، وفاقی وزیر دفاع خر م دستگیرخان کی وفاقی وزیر داخلہ احسن کی عیادت کے بعد میڈیا سے گفتگو

اتوار مئی 21:20

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 مئی2018ء) وفاقی وزیر دفاع خر م دستگیر نے کہاہے کہ نوازشریف بارہا کہہ چکے ہیں ہمیں اپنا گھر صاف کرنا چاہئے‘پاکستان میں دہشت گردی میں نوے فیصد کمی ہو گئی اور ہلاکتیں کم ہوئیں ‘دہشت گردی کے خلاف کامیابی دشمنوں کی آنکھوں میں کھٹھک رہی ہے‘ہمیں دنیا کو بتاناہے کہ افواج پاکستان نے کس طرح دہشت گردی پر قابوپایا‘نوازشریف کے بیان پر میڈیا احتیاط کرے اچھل کر نوازشریف پر الزامات لگائے جارہے ہیں‘بھارت کا میڈیا یہی چاہتا ہے کہ سیاسی لیڈران کو بدنام کیاجائے اسلئے احتیاط کی جائے‘ملک میں 126دن کا دھرنا کیوں ہوا اس کا جواب ملنا چاہئے۔

لاہور میں وفاقی وزیر داخلہ احسن کی عیادت کے بعد میڈیا سے گفتگو میں وفاقی وزیر دفاع خر م دستگیرخان نے کہا کہ پانامہ ٹرائل اور جے آئی ٹی کی تشکیل کیوں ہوئی اس کی وجہ بھی جاننا چاہیے ملک کی منتخب حکومت نے چاروں صوبوں کو امن روشنی اور ترقی پر گامزن پاکستان دیاہے اس ملک کو آئین کی عمل داری کی طرف لے جارہے ہیں ۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ نوازشریف پر انتہائی ناانصافی کا الزام لگا کر فارغ کر دیا گیا ہم نے ملک کو آئینی استحکام دیا جس سے دوسری حکومت اپنی مدت پوری کررہی ہے اداروں پر تنقید کی بات کہاں سے آتی ہے اداروں کی توہین یہ ہوتی ہے کہ ان کے فیصلوں پر عمل درآمد کیلئے انکار کیاجائے۔

انہوں نے کہا کہ اعلی عدلیہ کے ہر فیصلے کے ہر حرف پر عمل کیاہے عدلیہ کے فیصلوں پر عمل کرتے رہیں گے عوام کے بنیادی حقوق کی کانٹ چھانٹ نہیں کی جا سکتی جب نوازشریف نااہل ہوئے تو شادیانے بجائے گئے ہم نے عوام کے بنیادی حقوق دینے ہیں۔