ماہ رمضان المبار ک میں گراں فروشی کے خلاف مہم ، 356 گراں فروشوں کے خلاف کارروائی ، 43 جیل پانچ لاکھ روپے جرمانہ

جمعہ جون 18:51

کراچی ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 جون2018ء) کمشنر کراچی اعجاز احمد خان کی ہدایت پر ماہ رمضان المبارک میںکراچی میں کھانے پینے کی اشیاء کے سرکاری نرخوں کو کنٹرول کر نے کے لئے شروع کی گئی مہم جاری ہے۔ جمعہ کو انتظامیہ نے 356 ناجائز منافع خوروں کے خلاف کارروائی کی جس میں 43 گراں فروشوں کو جیل بھیجا گیا جبکہ پانچ لاکھ روپے سے زائد جرمانہ عائد کیا گیا۔

جن دکانداروں کو جیل بھیجا گیا ان میں 22 فروٹ والے،10 پولٹری والی3 دودھ والی 3 گوشت والی2 کریانہ والا2 سبزی والے ایک بیکری والا شامل ہے۔ مہم میں جن دکانداروں کے خلاف کارروائی کی گئی ان میں ، فروٹس، سبزی ، دالیں، آٹا مصا لحہ جات، دودھ، انڈے ،گوشت ، کھجلہ کھجور ، بیسن سمیت دیگر کھانے پینے کی اشیا کے دکاندار شامل ہیں ۔

(جاری ہے)

کمشنر کراچی نے تمام ڈپٹی کمشنرز کو ہدایت کی ہے وہ سرکاری نرخ پر اشیاء کی دستیابی کو یقنی بنائیں گراں فروشون کے خلاف مہم جاری رکھیں اور سرکاری نرخوں کو سختی سے کنٹرول کریں۔

مجموعی طور رپر اب تک گذشتہ 23 روز میں ماہ رمضان کے آغاز سے اب تک 8 ہزار سے زاید گراں فروشوں کے خلاف کارروائی کی گئی ہے ان کارروائیوں میں 551 گراں فروشوں کو جیل بھیجا گیا ہے اور 94 لاکھ روپے سے زائد جرمانہ عائد کیا گیا ہے۔ کمشنر کراچی نے کہا ہے کہ کراچی انتظامیہ نے ماہ رمضان المبار ک میں سرکاری نرخوں پر کھانے پینے کی اشیا کی دستیابی کو یقینی بنانے کے اقدامات کئے ہیں ا س سلسلہ میںتمام اضلاع میں ضلعی انتطامیہ کے افسران گراں فروشی کے خلاف سخت کارروائی کر رہے ہیں۔

کمشنر کراچی اعجاز احمد خان نی ڈپٹی کمشنرز سے کہا ہے کہ وہ اس بات کو بھی یقینی بنائیںکہ دکاندار اور ٹھیلے والے سرکاری نرخ نمایا ں طور پر آویزاں کریں۔ انہوں نے کہا کہ وہ دکانداروں کو پابند کریں کہ وہ سرکاری نرخ کی فہرستیں نمایاں طور پر آویزاں کریں۔ فہرستیں آویزاں نہ کر نے والوں کے خلاف بھی قانون کے مطابق کریں۔ انہوں نے کہا کہ انتظامیہ کی ہر ممکنہ کوشش ہے کہ روزہ داروں کو ماہ رمضان المبار ک میں اشیا خوردونو ش مناسب قیمت پر دستیاب ہوں۔ انہوں نے شہریوں سے بھی اپیل کی کہ وہ فہرستیں دیکھ کر قیمت اد کریں اور اگر کسی دکاندار کے خلاف شکایت ہو تو کمشنر کراچی کے دفتر میں فون نمبر 1299 پر شکایت درج کرائیں۔