ملک کو مسائل کی دلدل سے نکالنے کیلئے اچھی شہرت کے نمائندوں کا چنائو کرنا ہوگا ،سربراہ پاکستان سنی تحریک

عوام کی خدمت کیلئے کوشاں ہیں اہلسنت خدمت فائونڈیشن کے تحت مرکز اہلسنت پرمستحقین میں راشن کل تقسیم کیا جائیگا ،ثروت اعجاز قادری

جمعہ جون 21:23

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 جون2018ء) سربراہ پاکستان سنی تحریک محمد ثروت اعجاز قادری نے کہا ہے کہ ملک کو مسائل کی دلدل سے نکالنے کیلئے اچھی شہرت کے نمائندوں کا چنائو کرنا ہوگا ،،ووٹ دینے والوں کو عزت دیئے بغیر پائیدار جمہوریت ممکن نہیں ہے ،،ووٹ کو عزت دو کا نعرہ اپنے مفادات کیلئے لگانے والئے بتائیں ووٹ دینے والوں کو کتنی عزت دی ہے، عوام کسی کے جھانسے میں آ ئے بغیر ووٹ کا استعمال اپنے ضمیر کی روشنی میں کریں،عوام کی خدمت کیلئے کوشاں ہیں اہلسنت خدمت فائونڈیشن کے تحت مرکز اہلسنت پرمستحقین میں راشن کل تقسیم کیا جائیگا ، دنیا بھر میں ہونیوالے مسلمانوں پر مظالم و نسل کشی کے خلاف خاموش نہیں رہ سکتے ،القدس ہمیں اتحاد ویکجہتی اور اسلام دشمن قوتوں کے خلاف ڈٹ جانے کا درس دیتا ہے ،،فلسطین ،کشمیر ،،برما ،،شام ،،،یمن میں مسلمانوں کی نسل کشی ومظالم نے انسانیت کے سر شرم سے جھکا دیئے ہیں ،،امریکہ اور اسرائیل نے اقوام متحدہ کی قرار داد کے خلاف بیت المقدس میں سفارت خانہ بنانے اور مسلمانوں کا قتل عام کرکے عالمی دہشتگرد بن چکے ہیں ،،امریکہ اسرائیل ،،بھارت دنیا میں اسلحے کی ترسیل کو فروغ اور مسلم ممالک کو کمزور کرنے کیلئے اسلام دشمن پالیسیوں پر گامزن ہیں ،ان خیالات کا اظہار انہوں نے مرکز اہلسنت پر قائم الیکشن سیل کا دورہ کرتے ہوئے کیا ،ثروت اعجاز قادری نے کہا کہ مسلم حکمران بے ضمیر ہوچکے ہیں انہیں مسلمانوں کی نسل کشی ظلم وبربریت نظر نہیں آرہے ،مسلم ممالک ایک ہوجائیں تو دنیا کی کوئی طاقت مسلمانوں پر مظالم نہیں ڈھا سکتی ،یہود ونصاریٰ مسلمانوں میں انتشارپھیلا کر ٹکڑوں میں تقسیم کرنے کی سازشوں کو تیز کئے ہوئے ہیں ،انہوں نے کہا کہ بیت المقدس کے تحفظ اور حق خود ارادیت کیلئے فلسطین کے عوام کو ایک طرف ظلم وبربریت کا نشانہ بنایا جارہا ہے تو دوسری طرف مسلم نسل کشی کا نہ رکنے والا سلسلہ جاری ہے ،عالمی طاقتیں ،،اقوام متحدہ انسانیت کا دم بھرتے نہیں تھکتے مگر مسلمانوں پر ہونے والی جارحیت ظلم وبربریت اور نسل کشی کے خلاف خاموش ہیں ،،اقوام متحدہ کی خاموشی کو سمجھا جائے کہ انسانیت صر ف غیر مسلموں کیلئے ہے ،انہوں نے کہا کہ دین اسلام تو رنگ نسل ذات پات اور مذہب سے بالاتر ہوکر انسانیت کی خدمت کا درس دیتا ہے ۔