متحدہ مجلس عمل نے لاہور کے قومی و صوبائی اسمبلیوں کے امیدواران کا حتمی اعلان کر دیا

ایم ایم اے کرپٹ ٹولے اور قبضہ مافیا کے مقابلہ میں باکردار قیادت میدان میںلائی ہے ‘ذکر اللہ مجاہد ایم ایم اے نے لاہور سے قومی و صوبائی اسمبلی کی 2 خواتین امیدواروں کو بھی نامزد کیا ہے ‘امیر جماعت اسلامی لاہور

بدھ جون 21:00

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 جون2018ء) صدر متحدہ مجلس عمل وامیر جماعت اسلامی لاہورذکر اللہ مجاہد نے کہا ہے کہ آئندہ الیکشن میں مقابلہ باکردا ر قیادت اور کرپٹ ٹولے کے درمیان ہوگا، ایسے میں ایم ایم اے پانامہ زدہ اور قبضہ مافیا کے مقابلے میں باکردار قیادت لیکر میدان میں آئی ہے اور شہر لاہور کی قیادت کسی بھی بدکردار اور کرپٹ کو نہیں دیں گے ۔

ان خیالات کا اظہار گذشتہ روز انہوں نے ایم ایم اے لاہور کے نامزد امیدواران کے ناموں کا اعلان کرتے ہوئے کیا جس کے مطابق این اے 123 سے جمعیت علماء اسلام(ف) کے حافظ امجد علی ، این اے 124 سے جمعیت علماء اسلام (ف) کے محمد افضل خان ، این اے 125 جماعت اسلامی کے حافظ سلمان بٹ ، این اے 126 سے جماعت اسلامی کے فرید احمد پراچہ ، این اے 127 سے جمعیت علماء اسلام (ف) محمد ارشد بالا کوٹی ، این اے 128 سے جماعت اسلامی کے چوہدری منظور حسین گجر ، این اے 130 سے جماعت اسلامی کے لیاقت بلوچ ، این اے 131 سے جماعت اسلامی کے وقار ندیم وڑائچ ، این اے 132 سے جمعیت علماء اسلام (ف) کے حافظ حیدر علی یا جماعت اسلامی کے چوہدری محمد اعجاز ، این اے 133 جمعیت علماء پاکستان کے پیر اعجاز احمد ہاشمی ،این اے 134 سے جماعت اسلامی کی خاتون رہنما محترمہ انیلہ محمود چوہدری، این اے 135 جماعت اسلامی کے امیر العظیم اور این اے 136 سے جمعیت علماء اسلام (ف) کے چوہدر ی نظام الدین میوانتخابات میں حصہ لیں گے جبکہ خواتین کی مخصوص نشستوں پر جماعت اسلامی لاہور سے محترمہ زرافشاں فرحین اور محترمہ عظمیٰ نوید صاحبہ نامزد کی گئی ہیں اور لاہور سے صوبائی اسمبلی کیلئے درجہ ذیل امیدواران نامزد کیے گئے ہیں جن میں پی پی 145 سے مرکزی جمعیت اہلحدیث کے حافظ بابر فاروق رحیمی ، پی پی 146 سے جے یو آئی (ف) کے بلال احمد میر پی پی 147 سے جماعت اسلامی کے چوہدری محمد شوکت ، پی پی 148 سے جے یو آئی (ف) کے حافظ ندیم چوہدری ، پی پی 149 سے جے یو آئی (ف) کے ہاشم تہامی ایڈووکیٹ ، پی پی 150 سے جماعت اسلامی کے جبران بن سلمان بٹ ، پی پی 151 سے جماعت اسلامی کے شاہد نوید ملک ، پی پی 152 سے جے یو آئی (ف) کے پروفیسر ابو بکر چوہدری ، پی پی 153 سے جماعت اسلامی کے زاہد شباب بٹ ،پی پی 154 سے جماعت اسلامی کے ڈاکٹر عامر صدیقی ، پی پی 155 سے جے یو پی کے سید محفوظ حسین گیلانی ، پی پی 156 سے جے یو پی کے سید ارشد حسین گردیزی ، پی پی158 سے مرکزی جمعیت اہلحدیث کے عتیق الرحمن ایڈووکیٹ ، پی پی 159 سے جے یو آئی (ف) کے مولانا فیصح الدین ، پی پی 160 سے جے یو آئی (ف) کے حافظ غضنفر عزیز یابلال احمد میر ، پی پی 161 سے جماعت اسلامی کے امیر العظیم ، پی پی 162 جے یو آئی (ف) کے عمران بٹ یا جماعت اسلامی کے میاں خبیب نذیر ، پی پی 164 سے جمعیت علماء اسلام (ف) کے حاجی نذیر احمد ایڈووکیٹ یا اکرم سندھو ، پی پی165 سے جے یو پی کے حاجی شاہد محمود زرگر ، پی پی 166 سے جے یو آئی (ف) حافظ خالد میو، پی پی 167 سے جماعت اسلامی کے سید احسان اللہ وقاص ، پی پی 168 سے جماعت اسلامی کی خاتون رہنمارزافشاں فرحین ، پی پی 163 سے جے یو آئی (ف) کے حافظ حیدر علی ،پی پی 170 جماعت اسلامی کے چوہدری محمود الاحد،پی پی 171 سے جماعت اسلامی کے غلام حسین بلوچ ،پی پی 172 سے جماعت اسلامی کے ڈاکٹر رحمت علی شیخ ، پی پی 173 سے جماعت اسلامی کے ڈاکٹر ذکر اللہ مجاہد امیدوار ہوں گے اور صوبائی اسمبلی کی اقلیتی نشستوں پرڈاکٹر شمشاد منظور خان اور شاہد گلزار حصہ لیں گے اور خواتین کی مخصو ص نشستوں پر جماعت اسلامی کی محترمہ انیلہ محموداور کلثوم رانجھا امیدوار ہو ں گی ۔

(جاری ہے)

ذکر اللہ مجاہد نے مزید کہا کہ ظالم اور قاتل بھارت سے دوستی کے خواہش مند کسی لیڈر کو غیرت مند پاکستانی لوگ اپنی قیادت کا حق نہیں دیں گے ۔ موجودہ فرسودہ اور کرپٹ نظام میں پارٹیاں اور چہرے تبدیل کرنے سے کوئی بڑی تبدیلی نہیں آسکتی اس ملک کے مسائل کا اصل حل نظام کی تبدیلی ہے ۔ ایم ایم چہرے بدلنے کی بجائے نظام بدلنے کا عزم لیکر کر میدان میں آئی ہے اور انشاء اللہ نظام مصطفی ؐ اس ملک کا مقدر ہے۔ نہوں نے کہا کہ عوام اب چہرے اور پارٹی بدلنے والے مداریوںکے چنگل سے نکل کر اپنے گلی و محلے کے مسائل کے حل سے لیکر ملک و قوم کی ترقی اور استحکام کیلئے اپنے ووٹ کا استعمال ایماندار اور کرپشن سے پاک قیادت کے حق میں استعمال کریں ۔