این اے 53کی نشست نے عمران خان ،ْشاہد خاقان عباسی اور عائشہ گلا لئی کے کاغذات نامزدگی مسترد ہونے کے بعد اہمیت اختیار کرلی

این اے 53اسلام آباداپنے کاغذات نامزدگی مسترد کئے جانے کے خلاف عمران خان کی اپیل کی سماعت ،ْ سیکرٹری الیکشن کمیشن کو نوٹس این اے 95 میانوالی سے عمران خان کے کاغذات نامزدگی مسترد کئے جانے کے خلاف اپیل دائر کر دی گئی

جمعہ جون 21:22

این اے 53کی نشست نے عمران خان ،ْشاہد خاقان عباسی اور عائشہ گلا لئی کے ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 جون2018ء) این اے 53 اسلام آباد کی نشست نے پی ٹی آئی سربراہ عمران خان ،سابق وزیراعظم شاہدخاقان عباسی اور عائشہ گلالئی کے کاغذات نامزدگی مسترد ہونے کے بعد اہمیت حاصل کرلی ہے ۔تفصیلات کے مطابق کاغذات نامزدگی منظور یا مسترد کئے جانے کے خلاف اپیلیں دائر کرنے کا جمعہ کو آخری روز تھا ،ْاین اے 53اسلام آباداپنے کاغذات نامزدگی مسترد کئے جانے کے خلاف عمران خان کی اپیل کی سماعت ہوئی ۔

اپیلٹ ٹریبونل نے سیکریٹری الیکشن کمیشن کو نوٹس جاری کردیا ہے اور قانونی معاونت کیلئے نمائندہ مقرر کرنے کی ہدایت کی ہے۔۔عمران خان کے وکیل بابر اعوان نے کہا کہ تمام سیاسی جماعتیں کہہ رہی ہیں کہ تعیناتیاں سیاسی بنیادوں پرہورہی ہیں،نگراں حکومتیں میئرزکوہٹاکرایڈمنسٹریٹرزلائیں۔

(جاری ہے)

دوسری طرف این اے 95 میانوالی سے عمران خان کے کاغذات نامزدگی مسترد کئے جانے کے خلاف اپیل دائر کی گئی ۔

این اے 53 پرشاہد خاقان عباسی کی آر او کے فیصلے کے خلاف اپیل کی سماعت ہوئی ،ان کے وکیل نے کہا کہ جان بوجھ کر کوئی حقائق نہیں چھپائے گئے ،آر او نے قانون کی غلط تشریح کرکے کاغذات مسترد کئے۔اپیلٹ ٹربیونل نے الیکشن کمیشن اور آر او کو نوٹس جاری کردئیے ہیں،اسی حلقے سے مہتاب عباسی اورعائشہ گلالئی نے بھی کاغذات نامزدگی مستردکرنے کے فیصلے کو الیکشن ٹریبونل میں چیلنج کردیا ،ْسماعت 25جون کو ہوگی۔