وزیراعظم کا معذور سرکاری ملازم کی شکایت پر فوری ایکشن

معذور شخص نے پاکستان سیٹزن پورٹل پر شکایت بھیجی،وزیراعظم کی جانب سے ٹیکس چھوٹ دینے کیلئے تجاویز طلب، وزارت کامرس اور ایف بی آرمعذوروں کے زیراستعمال وہیل چیئر، مصنوعی اعضاء سمیت دیگر اشیاء پر ٹیکس سے چھوٹ کیلئے 30روز میں سفارشات بھیجیں، وزیراعظم عمران خان کی ہدایت

sanaullah nagra ثنااللہ ناگرہ جمعہ جنوری 17:27

وزیراعظم کا معذور سرکاری ملازم کی شکایت پر فوری ایکشن
اسلام آباد(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔11 جنوری2019ء) وزیراعظم عمران خان نے معذور سرکاری ملازم کی شکایت پر فوری ایکشن لے لیا، معذور شخص نے وزیراعظم کو پاکستان سیٹزن پورٹل پر شکایت بھیجی تھی، وزیراعظم نے معذوروں کے زیراستعمال اشیاء پروزارت کامرس اور ایف بی آرسے 30 روز میں سفارشات طلب کرلیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے معذور سرکاری ملازم کی شکایت پر فوری ایکشن لے لیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے معذورافراد کی آمدنی اور زیراستعمال اشیاء سے متعلق ٹیکس چھوٹ کیلئے اداروں سے سفارشات طلب کرلی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 30روز میں وزارت کامرس اور ایف بی آر سفارشات بھیجیں۔ وزیراعظم نے تمام بیوہ سرکاری خواتین کی تنخواہیں ٹیکس سے مستثنیٰ قراردینے کی تجاویزسمیت معذور سرکاری ملازمین کو انکم ٹیکس چھوٹ دینے کیلئے تجاویز بھی طلب کی ہیں۔

(جاری ہے)

معذور شہری نے پاکستان سیٹزن پورٹل پروزیراعظم کو درخواست کی ہے کہ وہیل چیئر ،مصنوعی اعضاء سمیت دیگر اشیاء پر ٹیکس سے چھوٹ دی جائے۔مخصوص افراد کی آمدنی پر ٹیکس کی چھوٹ دی جائے۔ دوسری جانب وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے کہا کہ موجودہ حکومت نے کم آمدنی والے طبقہ کے لئے بجلی اور گیس کی قیمتیں نہیں بڑھائی گئیں،تحریک انصاف کی حکومت کے پہلے پانچ ماہ کے دوران گزشتہ دو ادوار کی نسبت مہنگائی کی شرح کم رہی ہے۔

جمعرات کو یہاں وزارت خزانہ میں اینکر پرسنز کے ساتھ ایک نشست میں اظہار خیال کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ضمنی فنانس بل میں 90 فیصد اقدامات ملکی برآمدات، کاروبار اور سرمایہ کاری کو فروغ دینے پر مبنی ہوں گے۔ یہ فیصلہ کاروباری برادری کے اعتماد کو پیش نظر رکھتے ہوئے کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تاجر برادری کا بھی مؤقف ہے کہ جون تک انتظار کرنے کی بجائے ابھی سے کچھ اقدامات کر لئے جائیں جن میں سے بعض فوری نوعیت کے ہوں گے جبکہ دیگر کا اطلاق جولائی سے ہو گا۔