Live Updates

ٹرمپ کی پالیسی کی بدولت ایران ایک کمزور ریاست بن چکا ہے ، پومپیو

امریکا ملک آزادی اور انصاف کے مطالبے میں ایرانی عوام کے ساتھ کھڑا ہے،امریکی وزیرخارجہ

منگل جنوری 13:43

ٹرمپ کی پالیسی کی بدولت ایران ایک کمزور ریاست بن چکا ہے ، پومپیو
واشنگٹن(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 14 جنوری2020ء) امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیونے کہاہے کہ ان کا ملک عراقی قیادت کے ساتھ مل کر کام کرے گا تا کہ وہاں امریکی فورسز کے تعینات کیے جانے کے واسطے مناسب ترین جگہ کا تعین کیا جا سکے۔ میڈیارپورٹس کے مطابق کیلیفورنیا میں ہوور انسٹی ٹیوٹ میں گفتگو کرتے ہوئے پومپیو نے ایران پر الزام عائد کیا کہ وہ اٴْن ملک گیر مظاہروں کو ختم کرنے کے لیے سب کچھ کر گزرے گا جس میں ایرانی فورسز کے ہاتھوں غلطی سے یوکرین کا مسافر طیارہ مار گرانے کے خلاف احتجاج ہو رہا ہے۔

پومپیو نے ایک بار پھر ایران کو خبردار کیا کہ وہ کریک ڈاؤن کی مزید کارروائیوں سے باز رہے۔امریکی وزیر خارجہ کے مطابق اٴْن کا ملک آزادی اور انصاف کے مطالبے میں ایرانی عوام کے ساتھ کھڑا ہے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ ایرانی رہبر اعلی علی خامنہ ای کے خلاف ایرانی عوام کا غصہ جواز رکھتا ہے۔مائیک پومپیو نے مزید کہا کہ ایرانی القدس فورس کا سربراہ قاسم سلیمانی خطے میں امریکی سفارت خانوں کو نشانہ بنانے کی منصوبہ بندی کر رہا تھا ،،، صدر ٹرمپ نے روک لگانے کی پالیسی پر عمل پیرا ہو کر سلیمانی کا خاتمہ کیا۔

امریکی وزیر خارجہ کے مطابق ٹرمپ انتظامیہ کی پالیسی کی بدولت ایران ایک کمزور ریاست بن چکا ہے ... ہم نے ایرانی نظام کو اٴْس کے وسائل سے محروم کر دیا ہے تا کہ وہ ملیشیاؤں کی سپورٹ روک دے ... جوہری معاہدے نے ایرانی نظام کو دولت سے نواز دیا جو اٴْس نے اِن ملیشیاؤں پر لٹا دی۔
ایران اور امریکہ کے درمیان کشیدگی سے متعلق تازہ ترین معلومات