شاہدرہ ،ایل پی جی ٹینکر خوفناک دھماکے سے پھٹ گیا ،خوفناک آتشزدگی نے قریبی پٹرول پمپ اورکئی گاڑیوں کو بھی اپنی لپیٹ میں لے لیا

آتشزدگی کے نتیجے میں 10افراد جھلس کر زخمی ،2کی حالت تشویشناک ،دھماکے کی آواز کئی کلو دور تک سنی گئی ،خوف و ہراس پھیل گیا آسمان کو چھوتے آگ کے شعلے اوردھویں کے بادل کئی کلومیٹر دور سے دیکھے جا سکتے تھے،کئی گھنٹوںکی کوششوں کے بعد آگ پر قابو پایا گیا

بدھ مارچ 12:20

شاہدرہ ،ایل پی جی ٹینکر خوفناک دھماکے سے پھٹ گیا ،خوفناک آتشزدگی نے ..
لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 25 مارچ2020ء) لاہور میں شاہدرہ موڑ کے قریب ایل پی جی ٹینکر خوفناک دھماکے سے پھٹ گیا ،خوفناک آتشزدگی نے قریبی پٹرول پمپ اورکئی گاڑیوں کو بھی اپنی لپیٹ میں لے لیا ،آتشزدگی کی زد میں آکر10 افراد جھلس کر زخمی ہو گئے جن میں سے دو کی حالت تشویشناک ہے ،دھماکے کی آواز کئی کلو دور تک سنی گئی جس سے خوف و ہراس پھیل گیا جبکہ آسمان کو چھوتے آگ کے شعلے اوردھویں کے بادل بھی کئی کلومیٹر دور سے دیکھے جا سکتے تھے،امدادی ٹیموں نے کئی گھنٹوںکی کوششوں کے بعد آگ پر قابو پایا ۔

ایدھی انفارمیشن سیل کے مطابق شاہدرہ موڑ پر ایل پی جی ٹینکر الٹنے کے نتیجے میں زور دھماکہ ہوا جس کے بعد آئل ٹینکر میں آگ لگ گئی ۔ نجی ٹی وی کے مطابق خوفناک آتشزدگی نے قریبی پٹرول پمپ اور کئی گاڑیوں کو بھی اپنی لپیٹ میں لے لیا ۔

(جاری ہے)

دھماکے کی آواز اس قدر زیادہ تھی کہ کئی کلو میٹر دور تک سنی گئی جس سے لوگوں میں خوف و ہراس پھیل گیا ۔ جبکہ آگ کے شعلے آسمان کو چھوتے رہے جبکہ اورپورے علاقے میں دھوئیں کے بادل چھا گئے ۔

اطلاع ملتے ہی ریسکیو 1122، فائر بریگیڈ، پولیس اور بم ڈسپوزل سکواڈ کی ٹیمیںموقع پر پہنچ گئیں ۔ امدادی ٹیموں نے کئی گھنٹوں کی کوشش کے بعد آگ پر قابو پایا ۔ بتایا گیا ہے کہ واقعہ میں ٹریفک وارڈن سمیت 10افراد جھلس کر زخمی ہو گئے جنہیں طبی امداد کے لئے میو ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے ۔ زخمیوں میںزخمیوں میں 40 سالہ زرین، 45 سالہ عظیم، 65 سالہ زاہد عباس، 29 سالہ محمد افضل، 30 سالہ اخلاق، 30 سالہ ناصر، 50 سالہ محمد شریف، 32 سالہ عالمگیر، 35 سالہ اشتیاق احمد اور 18 سالہ شہزاد شامل ہیں۔ہسپتال انتظامیہ کے مطابق ایک مریض زاہد عباس کا جسم 100 فیصد جبکہ دوسرا مریض کا جسم 90 فیصد جھلس چکا ہے جن کی حالت تشویشناک ہے جبکہ باقی تمام مریضوں کا جسم 50 فیصد سے زیادہ جھلس چکا ہے۔