رواں مالی سال کے آغاز پر جولائی 2020ء کے دوران پاکستان میں کی جانے والی براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری میں 61 فیصد اضافہ

اتوار ستمبر 14:56

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 06 ستمبر2020ء) رواں مالی سال کے آغاز پر جولائی 2020ء کے دوران پاکستان میں کی جانے والی براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری (ایف ڈی آئی) میں 61 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ سٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) کی رپورٹ کے مطابق جاری مالی سال میں جولائی 2020ء کے دوران ملک میں 114.3 ملین ڈالر کی براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری کی گئی جبکہ جولائی 2019ء میں ایف ڈی آئی کاحجم 71.1 ملین ڈالر رہا تھا۔

(جاری ہے)

اس طرح جولائی 2019ء کے مقابلہ میں جولائی 2020ء کے دوران ملک میں کی جانے والی ایف ڈی آئی کی شرح میں 43.2 ملین ڈالر یعنی 61 فیصد کا نمایاں اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔ ایس بی پی کے مطابق جولائی 2020ء کے دوران چین کی جانب سے سب سے زیادہ 27 ملین ڈالر کی سرمایہ کاری کی گئی ہے جبکہ مالٹا کے سرمایہ کار 18.5 ملین ڈالر اور ہالینڈ کے سرمایہ کار 18.2 ملین ڈالر کی براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری کے ساتھ بالترتیب دوسرے اور تیسرے نمبر پر رہے ہیں۔ اس حوالہ سے اقتصادی ماہرین نے کہا ہے کہ کووڈ۔19 کے عالمی بحران کے دوران ملک میں ایک ماہ کے دوران 114 ملین ڈالر کی غیر ملکی سرمایہ کاری حوصلہ افزا ہے جس سے پاکستان میں غیر ملکی سرمایہ کاروں کی دلچسپی کی عکاسی ہوتی ہے۔