خانیوال میں4 ملزمان کی 16 سالہ لڑکے کے ساتھ اجتماعی زیادتی

ملزم محبوب نے اپنے تین ساتھیوں کے ساتھ مل کر بچے کو اپنی ہوس کا نشانہ بنایا، ملزمان کی گرفتاری کیلئےچھاپے مارے جارہے ہیں، پولیس

Shehryar Abbasi شہریار عباسی اتوار جنوری 11:57

خانیوال میں4 ملزمان کی 16 سالہ لڑکے کے ساتھ اجتماعی زیادتی
خانیوال (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین ۔ 17 جنوری2021ء) خانیوال میں4 ملزمان کی 16 سالہ لڑکے کے ساتھ اجتماعی زیادتی ، ملزم فرار۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق خانیوال کے علاقے تلمبہ میں یہ قبیح کارروائی کی گئی ، جہاں چار ملزمان نے سولہ سالہ لڑکے سے زیادتی کی۔ سنگین معاملے پر تلمبہ پولیس نے موقف دیا کہ ملزم محبوب نے اپنے تین ساتھیوں کے ساتھ مل کر بچے کو اپنی ہوس کا نشانہ بنایا، واقعے کے بعد پولیس نے زیادتی کامقدمہ درج کرلیا ہے اور ملزمان کی گرفتاری کیلئےچھاپے مارے جارہے ہیں۔

دوسری جانب زیادتی کے شکار لڑکے کو اسپتال منتقل کیا گیا، جہاں میڈیکل رپورٹ میں لڑکے سے زیادتی ثابت ہوگئی ہے۔ یاد رہے کہ گزشتہ روز قصور میں زیادتی کے بعد زخمی ہونے والا 10 سالہ بچہ دم توڑ گیا۔

(جاری ہے)

تفصیلات کے مطابق رسول نگر میں زیادتی کے بعد زخمی ہونے والا دس سالہ بچہ دم توڑ گیا۔وحید نامی بچے کو زیادتی کا نشانہ بنایا گیا تھا۔زیادتی کے بعد بچے کا گلا کاٹنے کی کوشش کی گئی تھی۔

نامعلوم ملزم بچے کو کیتھوں میں چھوڑ کر فرار ہو گئے تھے،اس وقت بچہ شدید زخمی حالت میں تھا۔ بچے کا گلا تیز دھار آلے سے کاٹنے کی کوشش کی گئی تھی،بچہ دو دن تک اسپتال میں زندگی اور موت کی جنگ لڑتا رہا، ترجمان پولیس کا کہنا ہے کہ ایک مشکوک ملزم کو گرفتار کر لیا گیا ہے جب کہ دیگر کی گرفتاری کے لیے کوششیں جاری ہیں۔ اس سے قبل زیادتی کے ایک واقعے میں 14 سالہ نویں جماعت کے طالب علم کو اغواء کے بعد زبردستی زیادتی کانشانہ بنا کر قتل کر دیا گیا۔

مانانوالہ کے محلہ فیصل ٹاون کے رہائشی عطا اللہ ولد نواز نے رائے ونڈ سے 14سالہ نویں جماعت کے طالب علم حسن عباس ولد عباس کو اغواء کر کے مانانوالہ کے نواحی گاوں نورے دیاں جگھیاں میں لے جا کر زبردستی زیادتی کا نشانہ بنا کر فائرنگ کر کے قتل کردیا ۔