اقوام متحدہ اگر ناجائز یہودی اسٹیٹ (اسرائیل) سے اپنی بات منوا نہیں سکتی تو اقوام متحدہ کو تحلیل کر دینا چاہیے، ڈاکٹر محمد اشرف آصف جلالی

بدھ جنوری 19:52

اقوام متحدہ اگر ناجائز یہودی اسٹیٹ (اسرائیل) سے اپنی بات منوا نہیں سکتی ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 20 جنوری2021ء) تحریک لبیک یا رسول اللہ صلی اللہ علیک وسلم کے سربراہ اور تحریک صراط مستقیم کے بانی ڈاکٹر محمد اشرف آصف جلالی نے کہا: اقوام متحدہ اگر ناجائز یہودی اسٹیٹ (اسرائیل) سے اپنی بات منوا نہیں سکتی تو اقوام متحدہ کو تحلیل کر دینا چاہیے۔ مسئلہ فلسطین کو سب سے زیادہ نقصان اقوام متحدہ کے معذرت خواہانہ رویے سے پہنچا ہے۔

(جاری ہے)

ناجائز یہودی اسٹیٹ (اسرائیل) کے عالمی قوانین کی دھجیاں اڑانے پر عالمی برادری کیوں خاموش ہی لاکھوں یہودی آباد کار فلسطین کے مغربی کنارے پر قبضہ جما کے بیٹھے ہوئے ہیں اور ادھر مسلم حکمرانوں کو یہودی اسٹیٹ سے دوستی اور اسے تسلیم کرنے کی فکر لاحق ہے۔ حالانکہ مسئلہ فلسطین حل ہو بھی جائے، پھر بھی یہود و نصاریٰ سے دوستی نہیں کی جا سکتی۔ اقوام متحدہ ناجائز یہودی اسٹیٹ (اسرائیل) کو مقبوضہ علاقوں میں یہودی بستیوں کی تعمیر سے روکے۔ صیہونی فورس کی نگرانی میں درجنوں بار مسجد اقصیٰ کی بے حرمتی کے واقعات ہو چکے ہیں۔ فلسطینیوں کی قربانیاں اپنی جگہ مگر اجتماعی طور پر امت بے حسی کا شکار ہے۔ عرب حکمرانوں کو موجودہ سستی اور کوتاہی پر تاریخ کبھی معاف نہیں کرے گی۔