بیلاروس کے صدر لوکاشینکو کو اپنے قتل کا خدشہ، حکم نامے پر دستخط کر دئیے

اتوار مئی 17:30

بیلاروس کے صدر لوکاشینکو کو اپنے قتل کا خدشہ، حکم نامے پر دستخط کر دئیے
ن*منسک (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 09 مئی2021ء) بیلاروس کے صدر الیکسانڈر لوکاشینکو کو اپنے قتل کا خدشہ ہے اور انہوں نے ایک ایسے صدارتی حکم نامے پر دستخط کر دئیے ہیں، جس کے تحت ان کی موت کے بعد صدارتی اختیارات ایک سکیورٹی کونسل کو منتقل ہو جائیں گے۔

(جاری ہے)

سرکاری خبر رساں ادارے بیلٹا نے بتایا کہ اگر لوکاشینکو کسی دوسری وجہ سے بھی اپنے فرائض انجام دینے کے قابل نا رہے، تو بھی ان کے اختیارات ملکی سلامتی کونسل کو منتقل ہو جائیں گے۔

لوکاشینکو نے گزشتہ ماہ کہا تھا کہ وہ بیلاروس میں اقتدار کا ڈھانچہ تبدیل کرنا چاہتے ہیں۔ اس سے قبل قانون یہ تھا کہ اگر صدر کا انتقال ہو جائے یا وہ اپنے فرائض انجام دینے کے قابل نا رہیں، تو ان کے اختیارات کی وزیر اعظم کو منتقلی لازمی تھی۔ ایسی صورت میں وزیر اعظم کو نئے صدر کی حلف برداری تک صدارتی فرائض بھی انجام دینا ہوتے تھے۔

متعلقہ عنوان :