حوثی ملیشیا نے سعودی علاقے خمیس مشیط کو اپنا مستقل ہدف بنا لیا

گزشتہ ایک ہفتے کے دوران خمیس مشیط پر پانچ بارودی ڈرونز بھیجے گئے

Muhammad Irfan محمد عرفان ہفتہ 19 جون 2021 13:14

حوثی ملیشیا نے سعودی علاقے خمیس مشیط کو اپنا مستقل ہدف بنا لیا
ریاض(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔19 جون2021ء ) سعودی عرب میں عید کی تعطیلات کے بعد سے یمن کی حوثی ملیشیا کی جانب سے ڈرون اور میزائل حملوں میں بہت زیادہ تیزی آ گئی تھی۔گزشتہ کئی روز سے حوثیوں کی جانب سے تقریباً روزانہ سعودی مملکت پر ڈرونز، گولے اورمیزائل داغے جا رہے ہیں۔ حوثی ملیشیا نے سعودی علاقے خمیس مشیط کو اپنے تخریبی حملوں کا مستقبل ہدف بنا لیا ہے۔

گزشتہ ایک ہفتے کے دوران خمیس مشیط پر پانچ بار بارودی ڈرونز سے حملہ کی کوشش کی گئی ہے۔ گزشتہ روزخمیس مشیط کو ایک بار پھر بارود بردار ڈرون سے نشانہ بنانے کی کوشش کی گئی تاہم حوثیوں کی جانب سے کیے گئے اس دہشت گردانہ حملے کو اتحاد ی افواج نے ہدف پر پہنچنے سے پہلے ہی ناکام بنا دیا ہے۔ سعودی میڈیا کے مطابق گزشتہ روز حوثی ملیشیا نے خمیس مشیط کے علاقے پر بارود سے لدا ڈرون بھیجا گیا، اس ڈرون کو راستے میں ہی تباہ کر دیا گیا۔

(جاری ہے)

اس طرح سعودی کی شہری آبادی بڑی تباہی سے بال بال بچ گئی ہے۔ ایک روز قبل بھی خمیس مشیط کے علاقے کو ڈرون سے نشانہ بنانے کی کوشش کی گئی تھی۔اس سے ایک دن پہلے بھی اسی علاقے کو نشانہ بنانے کی کوشش کی گئی تھی۔ واضح رہے کہ چند روز قبل یمن کی حوثی ملیشیا نے سعودیہ یمن سرحد کے قریب ایک گاوٴں کی آبادی کو نشانہ بنانے کی کوشش تھی۔ اس مقصد کے لیے جازان کے سرحدی گاوٴں پر پانچ گولے (پروجیکٹائل) داغے گئے جو کہ خوش قسمتی سے آبادی سے کچھ میٹر دْور ایک سڑک کے آس پاس آ گرے، جہاں اس وقت کوئی ٹریفک نہیں گزر رہی تھی، ورنہ جانی نقصان کا المیہ پیش آ سکتا تھا۔

جازان کے محکمہ شہری دفاع کے ترجمان مھند زیلعی نے بتایا کہ علاقہ مکینوں کی جانب سے اطلاع ملی تھی کہ گاوٴں کی ایک بڑی سڑک کے قریب پانچ گولے دکھائی دیئے ہیں۔شہری دفاع کے عملے نے فوراً پہنچ کر دیکھا تو یہ پروجیکٹائل تھے۔ جو خوش قسمتی سے آبادی سے خالی زمین پر آ گرے تھے، جس کی وجہ سے کوئی افسوس ناک واقعہ پیش نہیں آیا۔گزشتہ ایک ہفتے کے دوران حوثیوں نے سعودی عرب پر 8 ڈرون اور تین بیلسٹک میزائل حملے کیے تھے جنہیں مستعد سعودی فضائی افواج نے فوری طور پر فضا میں ہی تباہ کر دیا تھا۔