واٹس ایپ کے ذریعے منشیات فروشی کے الزام میں دبئی سے پاکستانی گرفتار

ْ ملزم کے قبضے سے 17ہزاردرہم بھی برآمد،مذکورہ رقم اپنی کار بیچ کر حاصل کی،پاکستانی شہری

ہفتہ اپریل 15:39

دبئی (اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ ہفتہ اپریل ء)متحدہ عرب امارات میں واٹس ایپ کے ذریعے منشیات فروخت کرنے کے الزام میں ایک پاکستانی شخص کو گرفتار کرلیا گیا۔میڈیارپورٹس کے مطابق پاکستانی ڈرائیور پر الزام ہے کہ وہ مبینہ طور پر واٹس ایپ کے ذریعے منشیات فروخت کیا کرتا تھا۔پراسیکیوٹر کے مطابق مذکورہ شخص، واٹس ایپ پیغامات کے ذریعے منشیات اور نارکوٹکس کی فروخت کے پیغامات بھیجا کرتا تھا، اس سے قبل اسے مراقبت کے علاقے میں 26 دسمبر 2017 کو بھی گرفتار کیا گیا تھا۔

دبئی پولیس کے اینٹی نارکوٹکس ڈویڑن کے ایک لیفٹیننٹ کے مطابق ہمیں باوثوق ذرائع سے اطلاع ملی کہ یہ شخص الوحیدہ کے علاقے میں اپنے گھر میں منشیات فروخت کرتا ہے، ہم نے اس کے گھر پر چھاپہ مارا اور اس کی جیب سے 16 ہزار 950 درہم برآمد کرلیے، جن کے بارے میں ہمیں شبہ تھا کہ اس نے منشیات کی فروخت سے حاصل کیے تھے۔

(جاری ہے)

'تاہم ملزم کا کہنا تھا کہ اسے یہ رقم اپنی کار کو فروخت کرنے سے حاصل ہوئی۔

مذکورہ پولیس افسر کے مطابق ہمارے پاس اطلاعات تھیں کہ وہ منشیات کی فروخت کے لیے سوشل میڈیا جیسے کہ واٹس ایپ، فیس بک اور انسٹا گرام استعمال کرتا ہے، اس کا موبائل فون قبضے میں لیا گیا اور اس کا جائزہ لیا گیا، جس میں موجود میسجز اور آڈیو پیغامات میں ایسے بے شمار الفاظ پائے گئے تھے، جو منشیات کی فروخت کے لیے استعمال ہوتے تھے جبکہ ایک سفید پاؤڈر کی تصویر بھی ملی۔دوسری جانب کرائم لیب رپورٹ کے مطابق مذکورہ شخص کے پیشاب کے نمونے میں بھی مارفین اور کوڈین کی موجودگی ثابت ہوئی۔

Your Thoughts and Comments