لیگی رہنما خواجہ آصف نے آرمی چیف سے الیکشن کی رات گفتگو کا احوال سنا دیا

الیکشن کی رات آرمی چیف کو فون کال نہیں کی تھی، واٹس ایپ پر میسجز بھیجے تھے، جن کا جواب بھی آ گیا تھا، خواجہ آصف کا انکشاف

Shehryar Abbasi شہریار عباسی منگل اکتوبر 22:40

لیگی رہنما خواجہ آصف نے آرمی چیف سے الیکشن کی رات گفتگو کا احوال سنا ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 اکتوبر2020ء) مسلم لیگ (ن)کے رہنما خواجہ آصف نے کہا ہے کہ الیکشن کی رات آرمی چیف کو فون کال نہیں کی بلکہ واٹس ایپ میسجز کیے تھے۔ نجی ٹی وی چینل کے پروگرام سے گفتگو کرتے ہوئے خواجہ آصف نے کہا کہ الیکشن کی رات میں نے آرمی چیف کو فون کال نہیں کیا بلکہ میں نے انہیں واٹس ایپ پر فارم 45 کی تصاویر بھیجی تھیں ۔ ہمیں فارم 45 سفید کاغذات پر مل رہے تھے جو جعلی تھے، ان کی تصاویر آرمی چیف کو بھیجی تھیں، جس پر ان کا جواب آیا تھا کہ فکر نہ کریں سب ٹھیک ہو جائے گا۔

لیکن تب تک جو دھاندلی ہونی تھی ہو چکی تھی، میں نے رات 8 بجے نہیں بلکہ رات 3 بجے میسجز بھیجے تھے ۔ اس وقت پولنگ سٹیشن پر اندر باہر آرمی کے نوجوان تھے ، اس صورتحال میں چیف الیکشن کمشنرکو تو نہیں بھیج سکتا تھا، آرمی چیف کو ہی بتانا تھا۔

(جاری ہے)

خواجہ آصف نے مزید کہا کہ آرمی چیف نے آئی ایس آئی میس کے ڈنر میں اسمبلی اراکین کی موجودگی میں جب یہ کہا کہ خواجہ آصف نے مجھ سے رابطہ کیا تو میں نے ان کی تب ہی تصحیح کر دی تھی ۔

کہ ایک تو میں نے 8 بجے فون نہٰیں کیا، دوسری بات میں نے میسجز کیے تھے۔ خواجہ آصف نے کہا کہ میں کبھی اسٹبلیشمنٹ سے رابطے میں نہیں رہا، اور خصوصاَ موجودہ اسٹیبلیشمنٹ میں کسی سے رابطہ نہیں۔ جن سے رابطے ہیں وہ ریٹائر لوگ ہیں اور ان سے 1969 سے تعلق ہے۔ سینیئر صحافی حامد میر نے خواجہ آصف سے گفتگو کی ویڈیو سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر بھی شیئر کی ہے۔
واضح رہے کہ حکومتی اراکین کی جانب سے خواجہ آصف پر الزام لگایا جاتا رہا ہے کہ الیکشن کی رات خواجہ آصف نے آرمی چیف سے رابطہ کیا تھا۔                   

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments