جب میں وزیراعظم بنوں گی تو آپ کو دیکھ لوں گی

مریم نواز کی نیب کے تفتیشی افسران کو دھمکیاں

Sajjad Qadir سجاد قادر منگل ستمبر 06:08

جب میں وزیراعظم بنوں گی تو آپ کو دیکھ لوں گی
لاہور ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 ستمبر2019ء)   رسی جل گئی مگر بل نہ گئے یہ محاورہ شریف خاندان کے ایک ایک فرد پر فٹ بیٹھتا ہے۔اگرچہ نواز شریف اور مریم نواز اس وقت جیل میں ہیں مگر پھر بھی ان کے لہجے سے رعونت نہیں جاتی۔میڈیا پر ان کا کوئی بیان دیکھ لیں،کسی بات پر اگر ان کا کوئی ری ایکشن آئے تو اس کے لفظوں سے آپ اندازہ کریں کہ ان کے اطوار سے بادشاہی سلسلہ نہیں گیا۔

حالانکہ وہ ملزم ہیں اور تفتیش کے دائرے میں ہیں انہیں تفتیشی افسران کے ساتھ تعاون کرنا چاہیے لیکن وہ اس کے الٹ چل رہے ہیں۔شریف خاندان جب سے مقدمات میں گھرا ہے وہ اپنے آپ کو بے گناہ ثابت کرنے کے بجائے اداروں پر پریشرڈالنے،ججز کوخریدنے اور افسران کو بلیک میل کرنے میں ملوث پایا جاتا رہا ہے۔

(جاری ہے)

معروف صحافی و اینکر پرسن عارف حمید بھٹی نے نجی ٹی وی چینل کے ایک پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جب مریم نواز کو تفتیش کے لیے نیب افسران نے طلب کیا تو اس نے کسی بھی سوال کا جواب دینے سے انکار کردیا۔

جب اس سے پوچھا گیا کہ آپ کے پاس پیسے کہاں سے آئے تو اس نے کہا کہ میرے والد یا دادا سے پوچھیں۔پھر جب انہیں ٹی ٹی دکھائی گئیں تو کہتی مجھے کیا پتا یہ کیا ہیں۔پھر افسران نے استفسار کیا کہ اگر آپ کو ان ٹی ٹی کا پتا نہیں تو اس کا مطلب ہے کہ یہ کرپشن کے پیسے ہیں تو اس پر مریم نواز نے رعونت سے بھرپور جواب دیا کہ ہاں ہو سکتا ہے کرپشن کے پیسے ہوں۔

اس کے بعد محترمہ فوری غصے ہو گئیں اور کہا کہ جب میں وزیراعظم بنوں گی تو تم لوگوں کو دیکھ لوں گی۔محترمہ کا یہ لب و لہجہ دیکھ کر افسران ڈر گئے اورپریشان ہو گئے۔سینئر جرنلسٹ عارف حمید بھٹی نے کہا ہے کہ محترمہ مریم نواز روزانہ کی بنیاد پر چھے سات ڈبے ٹشو پیپرز کے ختم کر جاتی ہیں اگر کوئی مخیر حضرات ان کی مدد کرنا چاہیں تو دو چار ڈبے انہیں بھجوا دیا کریں۔

لاہور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments