اُردو پوائنٹ پاکستان پشاورپشاور کی خبریںپشاور میں ایک اور خواجہ سرا تشدد کے بعد قتل 5 کے بعد سے خیبر پختونخوا ..

پشاور میں ایک اور خواجہ سرا تشدد کے بعد قتل

5 کے بعد سے خیبر پختونخوا میں یہ خواجہ سراؤں کے قتل کا 62واں واقعہ ہے ،ْ خواجہ سراؤں کے حقوق کیلئے سرگرم تنظیم ٹرانس ایکشن پاکستان کی مذمت

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 اگست2018ء)صوبہ خیبرپختونخوا کے دارالحکومت پشاور میں ایک خواجہ سرا کو نامعلوم افراد نے قتل کردیا۔پولیس کے مطابق خواجہ سرا ساجد عرف نازو کو باڑا گیٹ کے علاقے میں اس کی رہائش گاہ پر قتل کیا گیا ،ْپولیس کے مطابق نازو کی لاش پر تشدد کے نشانات بھی پائے گئے۔پولیس نے قتل کے شبہ میں 2 افراد کو گرفتار کرکے مقدمہ درج کرلیا۔

گرفتار افراد میں مقتول خواجہ سرا کا مالک مکان بھی شامل ہے۔

(خبر جاری ہے)

خواجہ سراؤں کے حقوق کے لیے سرگرم تنظیم ٹرانس ایکشن پاکستان نے نازو کے قتل کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ 2015 کے بعد سے خیبر پختونخوا میں یہ خواجہ سراؤں کے قتل کا 62واں واقعہ ہے۔تنظیم کا کہنا تھا کہ رواں برس اب تک خواجہ سراؤں پر تشدد کے 478 کیسز ریکارڈ ہوچکے ہیں۔رواں ماہ کے آغاز میں بھی پشاور کے نواحی علاقے سربند میں نامعلوم افراد نے 3 خواجہ سرائوں کو خنجر کے وار سے زخمی کر دیا تھا اس سے قبل مارچ میں پشاور کے رِنگ روڈ پر نامعلوم موٹر سائیکل سواروں کی فائرنگ کے نتیجے میں رکشے میں سوار ایک خواجہ سرا اپنے ساتھی سمیت جاں بحق ہوگیا تھا۔


اپنی رائے کا اظہار کریں -

پشاور شہر کی مزید خبریں