سربراہ شمالی کوریا سے ملاقات بے سود لگی تو اٹھ کر چلاجاؤں گا، امریکی صدر

شمالی کوریا کا مستقبل روشن تاہم اس کے لیے جوہری ہتھیاروں سے دستبردار ہونا پڑے گا،پریس کانفرنس

جمعرات اپریل 11:44

فلوریڈا(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 اپریل2018ء) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہاہے کہ شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ ان سے ملاقات کے دوران اگر ایسا لگا کہ اس بات چیت کا کوئی فائدہ نہیں تو فوراً ملاقات چھوڑ کر چلا جاؤں گا۔ شمالی کوریا کا مستقبل روشن ہے تاہم اس کے لیے جوہری ہتھیاروں سے دستبردار ہونا پڑے گا اور جس دن ایسا ہوگا وہ شمالی کوریا کے لیے بہت اہم دن ہوگا۔

(جاری ہے)

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق فلوریڈا میں جاپان کے وزیراعظم شنزو آبے سے ملاقات کے بعد ایک پریس کانفرنس میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ شمالی کوریا کے جوہری ہتھیاروں کے معاملے پر شمالی کوریا پر دباؤ برقرار رکھیں گے جب کہ اگر انہیں لگا کہ شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ ان سے ملاقات فائدہ مند نہیں تو ملاقات نہیں کروں گا اور اگر دوران ملاقات بھی ایسا ہی محسوس ہوا تو وہاں سے فوراً اٹھ کر چلا جاؤں گا۔

ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ سی آئی اے کے سربراہ مائک پومپیو نے شمالی کوریا کا خفیہ دورہ کیا، سربراہ سی آئی اے کے کم جونگ ان سے اچھے تعلقات ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ شمالی کوریا کا مستقبل روشن ہے تاہم اس کے لیے جوہری ہتھیاروں سے دستبردار ہونا پڑے گا اور جس دن ایسا ہوگا وہ شمالی کوریا کے لیے بہت اہم دن ہوگا۔