الیکشن کمیشن نے ضلع شیخوپورہ کی ابتدائی حلقہ بندیوں پر اعتراضات کا فیصلہ سنا دیا

الیکشن کمیشن میں پاکپتن، ساہیوال، اوکاڑہ اور خانیوال کے اضلاع کی ابتدائی حلقہ بندیوں پر اعتراضات کی سماعت (کل) ہوگی

جمعرات اپریل 22:54

الیکشن کمیشن نے ضلع شیخوپورہ کی ابتدائی حلقہ بندیوں پر اعتراضات کا ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 اپریل2018ء) الیکشن کمیشن نے ضلع شیخوپورہ کی ابتدائی حلقہ بندیوں پر اعتراضات کا فیصلہ سنا دیا ہے ،ْ پٹوار سرکل کھاریاں والا بیکی اور پٹوار سرکل مہمون ولی کو قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 121 میں شامل کر دیا گیا۔ پی پی 136 سے پٹوار سرکل قلعہ عامر سنگھ کو نکال کر پی پی 142 میں شامل کر دیا گیا، پی پی 137 سے پٹوار سرکل ساہو کی ملیاں کو نکال کر پی پی 136 میں شامل کر دیا گیا۔

ادھر الیکشن کمیشن میں پاکپتن، ساہیوال، اوکاڑہ اور خانیوال کے اضلاع کی ابتدائی حلقہ بندیوں پر اعتراضات کی سماعت (کل) جمعہ کو ہو گی، ان چار اضلاع میں قومی و صوبائی اسمبلی کے حلقوں پر 62 اعتراضات دائر کئے گئے ہیں۔ سندھ سے الیکشن کمیشن کے ممبر عبدالغفار سومرو کی سربراہی میں تین رکنی بنچ ان اعتراضات کی سماعت کرے گا۔

(جاری ہے)

پاکپتن سے قومی اسمبلی کی نشست پر ایک اور صوبائی اسمبلی کی نشستوں پر 2 اعتراضات موصول ہوئے ہیں۔

ساہیوال میں قومی اسمبلی کی نشستوں پر 7 جبکہ صوبائی اسمبلی کی نشستوں پر 9 اعتراضات دائر کئے گئے ہیں۔ ضلع خانیوال سے قومی اسمبلی کی نشستوں پر 5 جبکہ صوبائی اسمبلی کی نشستوں پر 13 اعتراضات دائر کئے گئے ہیں۔ ضلع اوکاڑہ سے قومی اسمبلی کے حلقوں پر 8 جبکہ صوبائی کی نشستوں پر 17 اعتراضات دائر کئے گئے ہیں