صرف رجسٹرڈ آڈٹ فرمیں ہی عوامی مفاد کی کمپنیوں کی فنانشل سٹیٹمنٹ کا آڈٹ کر سکتی ہیں، آڈٹ اوور سائٹ بورڈ

ہفتہ اپریل 19:10

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 اپریل2018ء) آڈٹ اوور سائٹ بورڈ نے آڈیٹرز اور عوامی مفاد کی کمپنیوں کوتاکید کی ہے کہ صرف آڈٹ اوور سائٹ بورڈ سے رجسٹرڈ آڈٹ فرمیں ہی عوامی مفاد کی کمپنیوں کی فنانشل سٹیٹمنٹ کا آڈٹ کر سکتی ہیں۔ ہفتہ کو سیکیورٹیز اینڈ ا یکسچینج کمیشن آف پاکستان کی جانب سے جاری بیان کے مطابق آڈٹ اوور سائٹ بورڈ ایک خودمختار وفاقی ریگولیٹری ادارہ ہی جسے پارلیمنٹ نے بین الا قوامی امثال کے پیش نظر 2016 میں قائم کیا۔

آڈٹ اوور سائٹ بورڈکا مقصد کمپنیوں کی فنانشل سٹیٹمنٹ کے آڈٹ کے معیار کو بہتر کرنا ہے۔آڈٹ اوور سائٹ بورڈ نے تسلی بخش کوالٹی کنٹرول ریویو (کیو سی آر) ریٹنگ کی حامل آڈٹ فرموں کو رجسٹرڈ کر لیا ہے۔ آڈٹ فرموں کی رجسٹریشن انسٹی ٹیوٹ آف چارٹرڈ اکاونٹنٹس آف پاکستان ( آئی سی اے پی)کے قائم کردہ آڈٹ کے کوالٹی اشورنس بورڈ کی سفارش پر کی جاتی ہے۔

(جاری ہے)

آڈٹ اور سائٹ بورڈ سے رجسٹرڈ آڈٹ فرموں کی فہرست بورڈ کی ویب سائٹ پر جاری کر دی گئی ہے۔ رجسٹرڈ آڈٹ فرموں کی فہرست پر باقاعدگی سے نظر ثانی کی جاتی رہے گی۔ عوامی مفاد کی کمپنیوں کی تعریف میں تمام لسٹڈ کمپنیاں، پبلک سیکٹر کمپنیاں، بینک، بیمہ کمپنیاں، فنڈز، سکیورٹیز بروکر اور عوام کو مختلف خدمات فراہم کرنے والی کمپنیاں شامل ہیں۔آڈٹ اوور سائٹ بورڈ کے انسپکٹر رواں ماہ کی 23تاریخ سے آئی سی اے پی کے کیو سی آر فریم ورک کے مکمل جائزہ کے لیے لاہوراور کراچی میں اپنا فیلڈ ورک شروع کر رہے ہیں۔

متعلقہ عنوان :