عمران خان نے سکیورٹی خدشات کے پیش نظر ممبر سازی سمیت تمام سیاسی سرگرمیاں منسوخ کردیں

کپتان نے داتا دربار حاضری کے بعد اندرون شہر کا دورہ کرنا تھا ، کارکنوں کی تمام تر تیاریاں دھری کی دھریں رہ گئیں

منگل اپریل 21:50

عمران خان نے سکیورٹی خدشات کے پیش نظر ممبر سازی سمیت تمام سیاسی سرگرمیاں ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 اپریل2018ء) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے سکیورٹی خدشات کے پیش نظر داتا دربار حاضری کے بعد ممبر سازی سمیت تمام سیاسی سرگرمیاں منسوخ کردیں ،کارکنوں کی تمام تر تیاریاں دھری کی دھریں رہ گئیں ۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز عمران خان پی کے سات پانچ آٹھ کے ذریعے لندن سے لاہور پہنچے، ایئرپورٹ پرکارکنوں نے ان کا استقبال کیا ۔

عمران خان میڈیا سے بات چیت کیے بغیر ہی اپنی رہائشگاہ کی طرف روانہ ہوگئے۔ عمران خان نے لاہور میں مصروف دن گزارنا تھا اور داتا دربار حاضری کے بعد بھاٹی چوک، شاہ عالم مارکیٹ اور موچی گیٹ سمیت دیگر مقامات پر ممبر سازی مہم کے سلسلے میں دورے کرنے تھے تاہم سکیورٹی حکام کی جانب سے انہیں سکیورٹی خدشات سے آگاہ کیا گیا جس کے بعد کپتان داتا دربار حاضری کے بعد واپس اسلام آباد روانہ ہوگئے۔

(جاری ہے)

عمران خان کے دورے کے حوالے سے کارکنوں کی جانب سے بھرپور تیاریاں کی گئی تھیں اور کپتان کے استقبال کے لئے جگہ جگہ ممبر سازی کیمپ لگائے گئے تھے تاہم دورہ منسوخ ہونے کی وجہ سے کارکنوں کی تیاریاں دھری کی دھریں رہ گئیں ۔ دوسری جانب پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی داتا دربار آمد کے سلسلے میں بھاٹی چوک، شاہ عالم مارکیٹ اور موچی گیٹ پر کھڑے کئے جانے والے کنٹینرز اورپولیس کی جانب سے لگائی جانے والی رکاوٹوں کی وجہ سے ٹریفک کا نظام شدید متاثر ہو گیا۔ گاڑیوں کی لمبی قطاروں میں لارڈ میئر کرنل ریٹائرڈ مبشر جاوید بھی پھنس گئے۔لارڈ میئر کے ہمراہ ہال روڈ تاجر برادری کے رہنما اور صدر بابر محمود بھی ٹریفک میں پھنسے رہے۔