دین پر مکمل طور پر عمل پیرا ہوکر ہی دنیا اور آخرت میں کامیابی حاصل کی جاسکتی ہے،مولانا عبدالحق ہاشمی

اتوار مئی 21:10

کوئٹہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 مئی2018ء) جماعت اسلامی بلوچستان کے صوبائی امیر مولانا عبدالحق ہاشمی نے کہا کہ ایوان اقتدار و اختیار کو جب تک اسلام کے تابع نہیں کیا جاتا ، ہمارے حالات نہیں بدلیں گے ۔ دین پر مکمل طور پر عمل پیرا ہوکر ہی دنیا اور آخرت میں کامیابی حاصل کی جاسکتی ہے ۔ عوام 2018 ء کے انتخابات میں خوف خدا رکھنے والی باکردار قیادت کا انتخاب کریں تاکہ سیکولر اور لبرل قوتوں کا راستہ روک کر پاکستان کو حقیقی معنوں میں ایک اسلامی و فلاحی ریاست بنایا جاسکے ۔

انہوںنے کہاکہ 70 سال سے ملک کے اقتدار پر قابض کرپٹ اور بد دیانت حکمرانوں نے عوام کو بنیادی حقوق سے بھی محروم کر رکھا ہے۔ عوام کو تعلیم ، صحت ، روزگار اور چھت جیسی بنیادی سہولتیں میسر نہیں۔

(جاری ہے)

ملک میں قرآن و سنت کی بالادستی کا جو خواب ہمارے بڑوں نے دیکھا تھا اسے نااہل اور مغرب سے مرعوب حکمرانوں نے چکنار چور کردیاہے ،اب ضرورت اس بات کی ہے کہ قیادت و سیادت ان لوگوں کے ہاتھ میں دی جائے جو اس مملکت خداد اد کو دین کے اصولوں کے مطابق چلاسکیں اور عوام کو جان ، مال اور عزت کا تحفظ دے سکیں ۔

ملک میں پہلے ہی حکمرانوں کے عاقبت نااندیش فیصلوں اور ناکام معاشی پالیسیوں کے باعث مہنگائی کاطوفان برپا ہے۔عوام کی قوت خرید اور معیار زندگی بری طرح متاثر ہوا ہے۔ ماہ رمضان میں عام آدمی کو درپیش مسائل اور ان کے حل سے حکمرانوں کوکوئی غرض نہیں۔بابرکت مہینے کا پہلاعشرہ مکمل ہوگیا ہے مگر مہنگائی کاطوفان تھمنے کا نام نہیں لے رہا۔

تھوک مارکیٹوں،پرچون فروشوں اور رمضان بازاروں میں اشیاء ضروریہ کی گراں فروشی کاسلسلہ جاری ہے۔اشیاء خوردونوش کی قیمتوں میں سو فیصد تک اضافہ ہوچکا ہے۔ ذخیرہ اندوزوں اور ناجائز منافع خوروں نے لوٹ مار مچاکرمہنگائی کی چکی میں پسے عوام کو بدحال کردیا ہے۔ رہی سہی کسرلوڈشیڈنگ نے پوری کردی ہے۔وزیر اعظم اور ان کے وزراء نے رمضان المبارک میں عوام کو ریلیف فراہم کرنے اور لوڈشیڈنگ نہ کرنے کے متعدد باردعوے اور وعدے کیے تھے مگر تمام دعوے ریت کی دیوار ثابت ہوئے ہیں۔

جہاں ماہ مقدس میں روزہ داروں کوشدیدمشکلات کا سامناکرنا پڑرہا ہے وہاں بجلی اور پانی کی عدم فراہمی نے ان کی مشکلات میں مزید اضافہ کردیا ہے۔ موجودہ حکمران اپنی مدت اقتدار پوری کرچکے ہیں۔۔پاکستان کے عوام کو سبزباغ دکھانے والے اپنے اقتدار کے پانچ سال پورے کرکے اب دوبارہ انہیں بے وقوف بنانے کے لیے مختلف روپ دھار کر مسیحائی کاڈھنڈوراپیٹ رہے ہیں۔ ہر شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والاشخص اذیت ناک مسائل اور کرب کاشکارہے، ان کوریلیف نام کی کوئی چیز میسر نہیں ۔