حکومت اور اپوزیشن کا نگراں وزیراعظم کیلئے جسٹس (ر) ناصر الملک کے نام کا اعلان

ایک ایسے شخص کا انتخاب کیا گیا جن کا ماضی بڑا واضح ہے ،ْ ا ن کا کر دارنگران وزیر اعظم ملک اور جمہوری عمل کے حق میں ہوگا ،ْ وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی جسٹس ناصر الملک پر بہت ذمہ داریاں عائد ہورہی ہیں ،ْ امید ہے ملک میں صاف اور شفاف الیکشن میں کرانے میں کامیاب ہونگے ،ْ خورشید شاہ تمام نام قابل عزت اور قابل احترام ہیں ،ْفیصلہ میرٹ پر کیا ہے ،ْ یہ نام ایسا ہے جس پر کوئی پاکستانی انگلی نہیں اٹھا سکتا ،ْ مشترکہ پریس کانفرنس

پیر مئی 13:20

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 مئی2018ء) حکومت اور اپوزیشن نے نگراں وزیراعظم کیلئے جسٹس (ر) ناصر الملک کے نام کا اعلان کیا ہے ۔ پیر کو یہ اعلان وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی ،ْ سپیکر قومی اسمبلی سر دار ایاز صادق اور اپوزیشن لیڈر نے مشترکہ پریس کانفرنس میں اعلان کیا ۔میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے سپیکر قومی اسمبلی سر دار ایاز صادق نے کہاکہ آج بڑے فخر سے کہہ سکتا ہوں کہ جمہوریت کی فتح ہوئی ہے ،ْ پارلیمنٹ کی فتح ہوئی ہے ،ْ وزیر اعظم اور اپوزیشن لیڈر نے اپوزیشن کے ساتھ مشاورت کے بعد فیصلہ کیا ہے ،ْیہ تاریخی فیصلہ ہے اور یہ آنے وقتوں میں ثابت کریگا کہ وہ پاکستان اور جمہوریت کے حق میں تھا اور یہ فیصلہ اس تسلسل کے حق میں ہے جس کی ہم سب خواہش رکھتے ہیں ۔

اس موقع پر بات چیت کرتے ہوئے وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہاکہ آج ایک اہم دن ہے ،ْ نگران وزیر اعظم پر اتفاق رائے ہوا ہے ،ْچھ ہفتے سے مشاورت کا عمل جاری تھا ،ْ میری اور اپوزیشن لیڈر کی کئی ملاقاتیں ہوئیں انہوںنے اپنی جماعت اور لیڈر شپ سے مشاورت کی اور ہم نے بھی مشاورت کی اور یہ عمل چلتا رہا اس میں فیصلہ کر نا آسان نہیں تھا لیکن میں اپوزیشن لیڈر اوران کی جماعت اور دیگر اپوزیشن کا مشکور ہوں کہ الحمد اللہ اتفاق رائے پیدا ہوا ہے اورہم یہ سمجھتے ہیں کہ ایک ایسے شخص کا انتخاب کیا گیا جن کا ماضی بڑا واضح ہے اور ا ن کا کر دارنگران وزیر اعظم ملک اور جمہوری عمل کے حق میں ہوگا انہوںنے کہاکہ خاص طورپر سپیکر کا مشکور ہوں جنہوںنے اس پراسسز کو آئینی طریقے سے ہماری مدد کی اور اس اتفاق رائے میں ان کا بھی کر دار ہے ،ْپہلے دن کہا تھا جو فیصلے شاہ صاحب کرینگے وہی ہوگا ۔

(جاری ہے)

اس موقع پر سید خورشید شاہ نے کہاکہ میں سپیکر سر دار ایاز صادق اور وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کا شکریہ ادا کرتا ہوں ۔انہوںنے کہاکہ سپیکر نے بھی اہم کر دار ادا کیا ہے ،ْ آج تاریخی دن ہے ۔انہوںنے کہاکہ چہ مگوئیاں ہوتی رہیں ،ْ تبصرے ہوتے رہے ،ْ میڈیا میں یہ بھی کہتے رہے کہ سیاستدان فیصلے نہیں کر تے ،ْ فیصلے پارلیمنٹ سے باہر ہوتے ہیں ۔

انہوںنے کہاکہ ہمارے پاس قابل عزت اور احترام لوگوں کے نام آئے اور تمام لائق لوگ ہیں ان کے کر دار پر کوئی شک و شبہات نہیں ہے ،ْیہی کوشش رہی کہ ہم فیصلہ کریں اور ایسا فیصلہ ہو جو پاکستان کے عوام اور پارلیمنٹ میں دیگر پارٹیوں کو منظور ہو ۔انہوںنے کہاکہ مجھے اپنی پارٹی کی گائیڈ لائن ملی ،ْ ان کی مدد شامل رہی جس پر میں ان کا شکر گزار ہوں۔

انہوںنے کہاکہ پیپلز پارٹی نے اپوزیشن سے رابطے کئے ،ْ کچھ پارٹیوں نے نام دیئے اور کچھ پارٹیوں نے اخبارات کے ذریعے نام دیئے انہوںنے کہاکہ آج میری نظر میں تاریخی دن ہے او ر ہم جمہوری فیصلہ کررہے ہیں ،ْ وزیر اعظم اورسپیکر کا شکر گزار ہوں انہوںنے کہاکہ ہم نے تحمل کے ساتھ جذبات سے ہٹ کر فیصلہ کیا ہے ۔۔خورشید شاہ نے کہاکہ نگران وزیر اعظم کیلئے جو نام سامنے آیا ہے وہ قابل احترام اور قابل عزت ہے ۔

اس موقع پر انہوںنے نگران وزیر اعظم کیلئے جسٹس ریٹائرڈ ناصر الملک کے نام کااعلان کرتے ہوئے کہاکہ جسٹس ناصر الملک چیف جسٹس آف پاکستان رہے ہیں ،ْان کا ایک کر دار رہا ہے ،ْ ان کی پوزیشن سب کے سامنے ہیںانہوںنے کہاکہ میری دعا ہے کہ اللہ تعالیٰ جسٹس ناصر الملک کو جذبہ اور ہمت دیگا کہ 25جولائی کو کامیاب انتخابات کرانے میں کامیاب ہونگے ،ْ اس ملک کو صاف اورشفاف الیکشن دینگے ۔

سید خورشید شاہ نے کہاکہ ملک مسائل سے گزر رہا ہے ،ْ اس ملک میں دھاندلیاں بھی ہوتی رہی ہیں ،ْناصر الملک پر بہت بڑی ذمہ داریاں عائد ہورہی ہیں ،ْ پاکستانی عوام ،ْمیڈیا اور سیاسی جماعتیں امید ہیں کہ وہ ملک میں صاف اور شفاف الیکشن میں کرانے میں کامیاب ہونگے ،ْ اللہ تعالیٰ ہم سب کو ہمت اورسوچ دے کہ پاکستان کی پارلیمنٹ ہمیشہ قائم رہے ،ْ مجھے خوشی ہورہی ہے کہ ایک مرتبہ پھر جمہوریت اپنے پانچ سال پورے ہیں کررہی ہے ،ْ2008سے 2013اور 2013سے 2018تک کٹھن سفر تھا ،ْ ہم نے مشکلات کا سامنا کیا ،ْ اللہ تعالیٰ آئندہ بھی ایسے چیلنجوں سے نمٹنے کی طاقت عطا فرمائے ۔

انہوںنے کہاکہ مجھے امید ہے اقتدار کی منتقلی کا عمل بھی جمہوری انداز میں ہوگا ۔ ایک سوال پر خورشید شاہ نے کہاکہ ہمارے پاس چھ نام تھے چار ڈسکس ہورہے ہیں دو اور بھی تھے چھ ناموں میں سے ایک کو فائنل کر نا تھا ،ْ ہم نے میرٹ پر فیصلہ کیا ہے ۔ انہوںنے کہاکہ ہر نام پر بات ہورہی تھی سب لوگ قابل احترام ہیں ،ْآخر ایک نام پر فیصلہ ہوگیا ہے اس موقع پر وزیراعظم نے کہا کہ یہ نام ایسا ہے جس پر کوئی پاکستانی انگلی نہیں اٹھا سکتا ۔۔خورشید شاہ نے کہا کہ یہ پاکستان کا اہم اور تاریخی الیکشن ہو گا -