عدالت میں ثابت ہوگیا میرا نام بلیک لسٹ میں تھا ای سی ایل میں نہیں‘

میرا نام بلیک لسٹ میں ڈالنے کی کوئی وجہ نہیں، زلفی بخاری کی اسلام آباد ہائی کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو

جمعرات جون 13:02

عدالت میں ثابت ہوگیا میرا نام بلیک لسٹ میں تھا ای سی ایل میں نہیں‘
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 جون2018ء) چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کے دوست زلفی بخاری نے کہا ہے کہ عدالت میں ثابت ہوگیا میرا نام بلیک لسٹ میں ہے‘ میرا نام بلیک لسٹ میں تھا ای سی ایل میں نہیں‘ میرا نام بلیک لسٹ میں ڈالنے کی کوئی وجہ نہیں۔

(جاری ہے)

جمعرات کو اسلام آباد ہائی کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے زلفی بخاری نے کہا کہ ٹیلی فون کسی نے نہیں کیا، ایئرپورٹ پر درخواست لکھ کر دی، میرا نام بلیک لسٹ میں تھا، ای سی ایل میں نہیں، نام بلیک لسٹ میں ڈالنے کا کسی نوٹس کے ذریعے نہیں بتایا گیا۔ انہوں نے کہا قانون کے مطابق آگے بڑھیں گے، نیب کا احترام ہے، وکلا کی مشاورت سے چلوں گا، نیب بلانا چاہے تو جا کر اپنے بزنس کے بارے میں بتا سکتا ہوں۔