آرچی چیف کی زیرصدارت کورکمانڈرز کانفرنس،علاقائی سکیورٹی، مشرقی و مغربی سرحدوں کی صورتحال کا جائزہ،

افغانستان میں مصالحتی عمل کی حمایت پراتفاق کانفرنس کے شرکائ نے دہشتگردی کے ناسور کوجڑ سے ختم کرنے کیلئے علاقائی سوچ کو اجاگر کیا، آئی ایس پی آر ہمارا مقصد پاکستان کے عوام کی خوشحالی ہے، ،بیرونی خطرات کا منہ توڑ جواب دیا جائے گا،امن واستحکام کیلئے ریاستی اداروں کی حمایت جاری رکھیں، جنرل قمر جاوید باجوہ

جمعرات دسمبر 23:21

آرچی چیف کی زیرصدارت کورکمانڈرز کانفرنس،علاقائی سکیورٹی، مشرقی و ..
راولپنڈی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 13 دسمبر2018ء) چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ امن واستحکام کیلئے تمام اداروں کی حمایت جاری رکھیں گے، ہمارا مقصد پاکستان کے عوام کی خوشحالی ہے،افغانستان میں قیام امن کیلئے تمام فریقین کی حمایت کی جائے گی۔ پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق پاک فوج کے سپہ سالار جنرل قمر جاوید باجوہ کی زیرصدارت جی ایچ کیو میں 216 ویں کورکمانڈرز کانفرنس ہوئی۔

کورکمانڈرزاجلاس میں ایل اوسی ،علاقائی سکیورٹی اور مشرقی و مغربی سرحدوں کی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔ کورکمانڈرزکانفرنس میں خطے میں امن واستحکام کیلئے دہشتگردی کے خاتمے پر غور کیا گیا۔ جبکہ دہشتگردی کے ناسور کوجڑ سے ختم کرنے کی اہمیت پر زور دیا گیا۔

(جاری ہے)

کانفرنس کے شرکائ نے دہشتگردی کے ناسور کوجڑ سے ختم کرنے کیلئے علاقائی سوچ کو اجاگر کیا۔

کانفرنس کے شرکائ نے قرار دیا کہ دہشتگردی کو جڑ سے اکھاڑنے کیلئے علاقائی تعاون ضروری ہے۔ کورکمانڈرزکانفرنس کے شرکائ نے افغانستان میں قیام امن کیلئے تمام فریقین کی حمایت پر اتفاق کا اعادہ کیا۔ شرکائ نے افغانستان میں مصالحتی عمل کی کامیابی کی توقعات کابھی اظہارکیا۔آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ تمام بیرونی خطرات کا منہ توڑ جواب دیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ ہمارا مقصد پاکستان کے عوام کی خوشحالی ہے۔امن واستحکام کیلئے تمام اداروں کی حمایت جاری رکھیں گے۔ جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ ملکی ترقی ، خوشحالی اور امن کیلئے تمام ریاستی اداروں سے تعاون جاری رہے گا۔۔