فیصل آباد میں لڑکے اور لڑکیوں کی فحش ویڈیوز بنانے والا گروہ پکڑا گیا

ملزم لڑکے لڑکیوں کو آئس کے نشے کا عادی بناتا بعدازاں زیادتی کرتا اور فحش ویڈیوز بناتا، ملزم کے چنگل سے آزاد 15 سالہ بچے نے ساری کہانی پولیس کو بتا دی

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان بدھ اپریل 12:28

فیصل آباد میں لڑکے اور لڑکیوں کی فحش ویڈیوز بنانے والا گروہ پکڑا گیا
فیصل آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین -24 اپریل2019ء) فیصل آباد کے علاقے مدینہ ٹاؤن میں فحش ویڈیوز بنانے والے تین ملزمان کو گرفتار کر لیا گیا۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ نوجوان کی فحش ویڈیوز اور نشے کے عادی بنانے والے نیٹ ورک کے چنگل سے ایک 15 سالہ نوجوان فرار ہو کر پولیس کے پاس پہنچا،اور بتایا کہ بلال نامی ملزم منشیات فروشوں کے ایک نیٹ ورک کے ساتھ آئس نشے کی فروخت میں ملوث ہے۔

جس کے بعد پولیس نے نوجوان کی اطلاع پر کاروائی کرتے ہوئے گروہ کے تین ملزمان کو حراست میں لے لیا۔میڈیا رپورٹس میں مزید بتایا گیا ہے کہ ایس ایس پی آپریشن اسماعیل الرحمان کے مطابق آئس کی فروخت میں ملوث اس نیٹ ورک کے تین ملزمان کو گرفتار کیا گیا۔اسماعیل الرحمن نے مزید بتایا کہ پورن ویڈیوز کے حوالے سے ایک بچہ ہمارے پاس آیا تھا جس کی اطلاع پر پورے نیٹ ورک کو حراست میں لے لیا تاہم مزید تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

(جاری ہے)

پولیس زرائع کا کہنا ہے کہ بلال نامی ملزم لڑکوں اور لڑکیوں کو آئس کے نشے کا عادی بنا کر ان کی فحش ویڈیوز تیار کر کے انہیں بلیک میل کرتا ہے اور آئس نشے کی نقل و حمل اور فروخت کا کام لیتا تھا۔ملزم خود کو پولیس کا قریبی اور کبھی ایس پی اور ڈی ایس پی قرار دیتا تھا۔اور کہتا تھا کہ وہ چاہے کچھ بھی کر لے،اس کے خلاف ایکشن نہیں لے سکتا۔نوجوان نے پولیس کو بتایا کہ بلال نامی شخص کے پاس لڑکیاں بھی آتی ہیں اور لڑکیوں سے زیادتی بھی کرتا ہے جب کہ اس نے میرے ساتھ زیادتی بھی کروائی اور کی ویڈیو بھی بنائی ہے۔

خیال رہے اس سے قبل اہور کے تھانہ سبزہ زار پولیس نے کارروائی کر کے فحش فلمیں بنانے والے گروہ میں شامل 2 لڑکیوں سمیت 10 افراد کو گرفتار کیا تھا۔ ملزمان عرصہ دراز سے فحش فلمیں بنا کر پشاور اور افغانستان کے سینما گھروں کو فروخت کر رہے تھے۔