Live Updates

کلبھوشن یادیو کی رحم کی اپیل پر قانون کے مطابق عمل کیا جائے، آرمی چیف

آرمی چیف کے بعد رحم کی اپیل کا معاملہ صدرِ مملکت کے پاس جائے گا، ڈی جی آئی ایس پی آر

Usman Khadim Kamboh عثمان خادم کمبوہ بدھ جولائی 23:18

کلبھوشن یادیو کی رحم کی اپیل پر قانون کے مطابق عمل کیا جائے، آرمی چیف
راولپنڈی (اردوپوائنٹ اخبار تازہ ترین۔17جولائی 2019) ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے بتایا ہے کہ کلبھوشن یاد نے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے رحم کی اپیل کی ہے جس پر آرمی چیف نے کہا ہے کہ کلبھوشن یادیو کی رحم کی اپیل پر قانون کے مطابق عمل کیا جائے۔ ڈی جی آئی ایس پی آر نے بتایا ہے کہ آرمی چیف کے بعد رحم کی اپیل کا معاملہ صدرِ مملکت کے پاس جائے گا۔

انہوں نے مزید بتایا کہ ہ کلبھوشن جادیو کیس میں وکیل کا چناؤ مشکل ترین کام تھا اورآرمی چیف نے وکیل کے تقرر کا کام خاور قریشی کے حوالے کیا ، اللہ کا شکر ہے کہ پاکستانعالمی عدالت میں سرخرو ہوا۔ ترجمان پاک فوج میجر جنرل آصف غفور کا کہنا ہے کہ آرمی چیفنے کلبھوشن یادیو کی رحم کی اپیل پر تاحال کوئی فیصلہ نہیں کیا، کلبھوشن کی سزائے موت کے حوالے سے حکومت قانون کے مطابق جو بھی فیصلہ کرے گی، اس پر عمل کیا جائے گا۔

(جاری ہے)

تفصیلات کے مطابق پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور کی جانب سے عالمیعدالت میں کلبھوشن یادیو کیس کے فیصلے پر ردعمل دیا گیا ہے۔ نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے کہا کہ اللہ نے پاکستان، عوام اور عدلیہ کو سرخرو کیا ہے، اٹارنی جنرل کی سربراہی میں پاکستانی وکلاء نے کیس زبردست انداز میں لڑا۔

جبکہ وزارت خارجہ نے بھی بہترین کام کیا ہے۔ کلبھوشن یادیو کی پھانسی کی سزا کے حوالے سے ترجمان پاک فوج کا کہنا ہے کہ بھارتی جاسوس کی رحم کی اپیل تاحال آرمی چیف کے پاس ہے۔ عالمی عدالت کے فیصلے سے قبل اس حوالے سے کوئی فیصلہ نہیں کرنا چاہتے تھے۔ آرمی چیف نے کلبھوشن یادیو کی پھانسی کی سزا کو ختم کرنے یا اس پر عمل کروانے سے متعلق تاحال کوئی فیصلہ نہیں کیا۔
ڈیجیٹل پاکستان کی بنیاد سے متعلق تازہ ترین معلومات