ملالہ کے لیے کشمیریوں کی نسبت آئی فون11زیادہ اہم ثابت ہوا

آئی فون 11اور اپنے خوب صورت لباس کے ایک ہی دن لانچ پر ٹویٹ کر دیا،سوشل میڈیا پر بحث کا مرکز

Sajjad Qadir سجاد قادر جمعرات ستمبر 05:43

ملالہ کے لیے کشمیریوں کی نسبت آئی فون11زیادہ اہم ثابت ہوا
لاہور ۔ ( اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 12ستمبر 2019ء)   عدنان سمیع سے لے کر ملالہ یوسف زئی تک جس کو بھی پاکستان نے پہچان دی اس نے بعد میں پاکستان کو ہی اہمیت دینا چھوڑ دی۔ملالہ پر پاکستان میں دہشت گرد حملہ کے بعد جس طرح سے اس وقت کی حکومت اور آرمی نے سپورٹ کیااور علاج کے لیے بیرون ملک لے کر گئے وہ کسی سے ڈھکا چھپا نہیں مگر عالمی طاقتیں بھی اپنے لیے مہرے تلاش کرنے کی تاک میں ہوتی ہیں۔

انہوں نے ملالہ کو ٹریپ کیا،نوبل انعام سے نوازااور نام نہاد این جی اوز کا سربراہ بنا کر دنیا بھر میں سفیر نامزد کر سدیا۔آج مغربی دنیا کا ہر دوسرا ملک انہیں اپنی شہریت دینے کے علاوہ طرح طرح کے انعام و اکرام سے نوازتا نظر آٹا ہے۔بظاہر ملالہ دنیا بھر میں بچیوں کی تعلیم اور ان کے لیے انصاف اور حق کی خاطر ایک آواز بن کر دوڑی پھر رہی ہے۔

(جاری ہے)

مگر حیرانی کی بات ہے کہ ملالہ کے اپنے ملک کے اہم حصے بلکہ شہ رگ میں خون کی ندیاں بہہ رہی ہیں۔36دنوں سے کرفیو ہے اور بچیوں کے تعلیمی اداروں کے ساتھ ساتھ اسپتال بھی بند ہیں،مگر مجال ہے کہ ملالہ نے کسی فورم پر اس حوالے سے بات کی ہو یا سوشل میڈیا پر ہی کوئی پوسٹ کر دی ہو۔آج کشمیر میں کرفیو کو جب36دن ہو چکے ساری امت مسلمہ کشمیریوں کے غم میں برابر کی شریک کھڑی نظر آ رہی ہے تو ملالہ نے ایک انتہائی گھٹیا حرکت کر ڈالی ہے۔

ملالہ نے سوشل میڈیا سائٹ ٹوئٹر پر پوسٹ کی اور اپنے ایک نئے لباس کی تصویر شیئر کی جس پر ایک ساتھ تین شیشے ڈیزائن کے طور پر لگے ہیں۔یہ ڈیزائن بالکل ویسے ہے جیسے نئے آئی فون 11کے تین کیمرے لگے ہوئے ہیں۔اس پر ملالہ نے لکھا کہ کیا اتفاق ہے کہ میرا نیا لباس اورآئی فون 11ایک ہی دن لانچ ہوئے ہیں۔ملالہ کی اس ٹویٹ کو لے کر لوگوں نے اس کے خوب لتے لیے ہیں۔

سوشل میڈیا صارفین نے ملالہ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ آپ لڑکیوں کی تعلیم کی نمائندہ بنی پھرتی ہو مگر کشمیر کی بچیوں کے سکول بند ہیں ا س پر آواز نہیں اٹھائی،ایک اور صارف نے لکھا کہ کشمیر میں بہتے خون کی نسبت آئی فون 11ملالہ کے لیے زیادہ اہم ہے۔اس طرح ملے جلے جملے لکھتے ہوئے سوشل میڈیا صارفین نے ملالہ یوسف زئی کو خوب تنقید کا نشانہ بنایا ہے اور یہ ٹوئٹر کا ٹاپ ٹرینڈ بن چکا ہوا ہے۔