اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کرپشن کیس میں نیب کی جانب سے اثاثوں کی تفصیلات پیش

جمعرات ستمبر 16:40

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 19 ستمبر2019ء) اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کرپشن کیس میں نیب کی جانب سے اثاثوں کی تفصیلات پیش کی گئیں۔جمعرات کو سندھ ہائی کورٹ میں آغا سراج درانی اور دیگر کے خلاف ایک ارب 4کروڑروپے کرپشن کیس میں درخواست ضمانت پر سماعت کی گئی۔ سماعت کے دوران نیب کی جانب سے آغا سراج درانی کی بینامی جائیداد،گاڑیوں سمیت57اثاثوں کی تفصیلات عدالت میں پیش کی گئیں۔

عدالت نے سماعت کے بعد 26ستمبرکونیب پراسیکیوٹر کو دلائل دینے کے لیے طلب کرلیا ہے ۔اسپیکرسندھ اسمبلی آغا سراج درانی کرپشن کیس میں جیل میں ہیں۔سماعت کے دوران آغا سراج درانی کے وکیل نے کہا کہ نیب نے گرفتاری سے پہلے سراج درانی کوکال اپ نوٹس جاری نہیں کیا، جواب میں نیب کا کہنا تھا کہ سراج درانی کونیب نے نوٹس بھیجاتھا،ان کے جواب کی کاپی بھی منسلک ہے۔

(جاری ہے)

وکیل نے کہا کہ ریفرنس میں سراج درانی کی فیملی ممبرزسمیت 28افرادکونامزدکیاگیا ہے ، دلائل کے دوران آغاسراج درانی کے وکیل نے ان کا عہدہ اسپیکرقومی اسمبلی پڑھ دیا جس پر چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ احمد علی شیخ نے تصحیح کی کہ آغاسراج درانی قومی نہیں اسپیکرصوبائی اسمبلی ہیں۔خیال رہے آغا سراج درانی آمدن سے زائد اثاثوں کیالزام میں جوڈیشل ریمانڈ پر ہیں، نیب حکام نے اسپیکرسندھ اسمبلی آغا سراج درانی کے خلاف آمدن سے زائد اثاثوں کاریفرنس دائر کیا تھا ۔واضح رہے نیب نے اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کوبیس فروری کواسلام آبادکیہوٹل سیحراست میں لیاتھا جبکہ ان کی درخواست ضمانت سندھ ہائی کورٹ میں زیرسماعت ہے۔