شارجہ میں سیلابی ریلوں کی زد میں آ کر چار افراد ڈوب گئے

آٹھ افراد کو پولیس نے ڈوبنے سے بچا لیا، مرنے والوں میں دو بچے بھی شامل ہیں

Muhammad Irfan محمد عرفان بدھ مئی 16:19

شارجہ میں سیلابی ریلوں کی زد میں آ کر چار افراد ڈوب گئے
شارجہ(اُردوپوائنٹ تازہ ترین اخبار-72مئی2020ء) شارجہ میں سیلابی ریلوں کی زد میں آکر کئی افراد ڈوب گئے۔

پہلا واقعہ وادی الحیلو میں پیش آیا جہاں ایک کار سیلابی ریلے کی زد میں آ کر بہہ گئی جس کے نتیجے میں چار افراد جاں بحق ہو گئے۔ جن فمیں اماراتی خاتون کے علاوہ اس کے دو بچے بھی شامل ہیں۔ بیٹی کی عمر چار سال جبکہ بیٹے کی عمر دو سال تھی۔

(جاری ہے)

جبکہ خاتون کا خاوند اور چھ سال بیٹے کو ڈوبنے سے بچا لیا گیا۔مرنے والی بدنصیب بچی مدیائل فہد المتروشی یاسمین کنڈرگارٹن میں کنڈر گارٹن کی سٹوڈنٹ تھی، جبکہ بیٹے کا نام عمر فہد المتروشی تھا۔

اس کے علاوہ بھی مختلف واقعات میں تین کاریں بہہ گئیں، جن کے نتیجے میں دو افراد ڈوب گئے۔جبکہ دو افراد کی جان بچا لی گئی۔ شارجہ پولیس کے مطابق مجموعی طور پر آٹھ افراد کو ڈوبنے سے بچایا گیا ہے، جن میں ایک خاتون بھی شامل ہے، جس کی ہسپتال میں حالت تشویشناک بتائی جا رہی ہے۔ ڈوبنے والے افراد کو زندہ بچانے اور مرنے والوں کی لاشیں تلاش کرنے کا عمل شارجہ پولیس کے ڈپٹی کمانڈر انچیف بریگیڈیر عبداللہ مبارک بن امر کی زیر نگرانی انجام دیا گیا۔

جس میں سول ڈیفنس، ایئر ونگ ڈیپارٹمنٹ اور نیشنل ایمبولینس نے بھی حصہ لیا۔ پولیس نے خبردار کیا ہے کہ بارش کی صورت میں نشیبی علاقوں اور وادیوں کا رُخ کرنے سے گریز کیا جائے تاکہ کسی ناخوشگوار صورت حال سے بچائو ممکن ہو سکے۔