ریاست ہریانہ، بھارتی انتہا پسندوں نے گوشت لے جانے والے مسلم نوجوان کوبدترین تشدد کا نشانہ بنا ڈالا

ہفتہ اگست 20:05

گڑگائوں۔ یکم اگست (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 01 اگست2020ء) بھارتی ریاست ہریانہ میں بھارتی انتہا پسندوں نے گوشت لے جانے والے مسلم نوجوان کو ہتھوڑوں اور لاٹھیوں سے بدترین تشدد کا نشانہ بنا ڈالا جبکہ بھارتی پولیس اور عوام خاموشی کے ساتھ تماشائی بن کر سفاکیت کا یہ کھیل دیکھنے میں مصروف رہی۔

(جاری ہے)

ذرائع ابلاغ کے مطابق ریاست ہریانہ کے گڑہ گاؤں میں آر ایس آیس اور شیو سینا کے انتہاء پسندوں نے ٹرک میں گوشت لے جانے والے لقمان نامی نوجوان کو گھیر کر ٹرک سے اتار لیا ۔

انتہاء پسندوں نے نوجوان پر گائے کا گوشت لے جانے کا الزام لگاتے ہوئے اسے ڈنڈوں ، لاٹھیوں ، ہتھوڑوں اور مکوں سے شدید زخمی کردیا۔ذرائع کے مطابق موقع پر موجود پولیس بھی اس نوجوان کی مدد کو آگے نہیں آئی بس خاموش تماشائی بن کر ظالمانہ کھیل دیکھتی رہی ۔

متعلقہ عنوان :