اسد قیصر سے افغان قائمقام سفیر رحیم اللہ قطرہ کی ملاقات ،

دو طرفہ تعلقات، خطے میں امن و امان کی صورتحال اور باہمی دلچسپی کے دیگرامور پر تبادلہ خیال پارلیمانی سفارتکاری کے ذریعے پاکستان اور افغانستان کے مابین باہمی تعلقات کو فروغ دینے میں مدد ملے گی، اسپیکرقومی اسمبلی اسد قیصر کی گفتگو

جمعرات ستمبر 18:07

اسد قیصر سے افغان قائمقام سفیر رحیم اللہ قطرہ کی ملاقات ،
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 24 ستمبر2020ء) اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر سے افغانستان کے قائم مقام سفیر رحیم اللہ قطرہ نے ملاقات کی جس میں دو طرفہ تعلقات، خطے میں امن و امان کی صورتحال اور باہمی دلچسپی کے دیگرامور پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ اسد قیصر نے کہاکہ پاکستان اور افغانستان کے مابین تعلقات مذہب، اخوت، ثقافت اور ہمسائیگی کی مضبوط بنیادوں پر استوار ہیں۔

اسد قیصرنے کہاکہ سرحد کی دونوں جانب کی عوام کے درمیان محبت اور باہمی احترام کا رشتہ پایا جاتا ہے،پاکستان ایک پرامن ،مستحکم اورخوشحال افغانستان دیکھنے کا خواہاں ہے۔اسد قیصر نے کہاکہ پارلیمانی سفارتکاری کے ذریعے پاکستان اور افغانستان کے مابین باہمی تعلقات کو فروغ دینے میں مدد ملے گی۔

(جاری ہے)

انہوںنے کہاکہ پاکستان، افغانستان کے ساتھ معاشی، اقتصادی اور علاقائی ترقی کے لیے تعاون کو مزید فروغ دینا چاہتا ہے۔

انہوںنے کہاکہ پاکستان خطے میں امن کے قیام سمیت خطے کی ترقی اور خوشحالی کے لیے مل کر کام کرنا چاہتا ہے، افغان امن معاہدہ افغانستان اور خطے میں امن کے قیام اور ترقی میں ایک اہم سنگ میل کی حیثیت رکھتا ہے۔دونوں رہنماؤں نے پارلیمان کی قائمہ کمیٹیوں کے مابین روابط قائم کرنے پر اتفاق کیا ہے ۔ رحیم اللہ قطرہ نے کہاکہ افغانستان پاکستان کے ساتھ اپنے قریبی دوستانہ تعلقات کو بڑی اہمیت دیتاہے، افغانستان خطے میں امن کے قیام کے لیے پاکستان کی کاوشوں کو قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے۔

افغان سفیر نے کہاکہ افغانستان پاکستان کے ساتھ اقتصادی و تجارتی شعبوں میں تعاون کو فروغ دینے کا خواں ہے۔افغانی سفیر نے کہاکہ افغانی عوام پاکستانی عوام کے ساتھ محبت اور خیر سگالی کے جذبات رکھتے ہیں ، دونوں ممالک کے مابین تجارت کے بہترین مواقع میسر ہیں جن سے استفادہ کیا جارہا ہے۔ انہوںنے کہاکہ دونوں ممالک کے مابین تعلقات کو مزید مستحکم بنانے میں پارلیمان اہم کردار ادا کر سکتا ہے۔افغان کے قائم مقام سفیر رحیم اللہ قطرہ نے افغان تجارت کی راہ میں حائل رکاؤٹوں کو دور کرنے میں اسپیکر قومی اسمبلی کے کردار کی تعریف کی ۔