وفاقی حکومت کا والدین کے حقوق کے تحفظ کیلئے آرڈیننس لانے کا فیصلہ

آرڈیننس کے بعد بچے ذاتی ملکیتی مکان سے بھی والدین کو بے دخل نہیں کرسکیں گے، والد 10 روز میں آسان طریقہ کار اختیار کرکے بچوں کو بیدخل کرسکے گا

اتوار نومبر 11:55

وفاقی حکومت کا والدین کے حقوق کے تحفظ کیلئے آرڈیننس لانے کا فیصلہ
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 29 نومبر2020ء) وفاقی حکومت نے والدین کے حقوق کے تحفظ کے لیے آرڈیننس لانے کا فیصلہ کر لیا۔ تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت نے والدین کے حقوق کے تحفظ کیلئے آرڈیننس لانے کا فیصلہ کیا ہے۔ ترجمان وزارت قانون کے مطابق وزیر قانون فروغ نسیم نے والدین کے حقوق سے متعلق مسودہ پر وزیراعظم سےمشاورت کی ہے۔

(جاری ہے)

وزارت قانون و انصاف کے ترجمان کے مطابق آرڈیننس کیذریعے اولاد کو والدین کو گھروں سے بے دخل کرنے سے روکا جاسکے گا۔آرڈیننس کے بعد بچے ذاتی ملکیتی مکان سے بھی والدین کو بے دخل نہیں کرسکیں گے، والد 10 روز میں آسان طریقہ کار اختیار کرکے بچوں کو بیدخل کرسکے گا ۔ والدین کے حقوق کے تحفظ کے لیے آرڈیننس لانے کے لیے جلد از جلد قانون سازی کی جائے گی ۔ ترجمان وزارت قانون کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے والدین کےحقوق سے متعلق آرڈیننس لانےکی منظوری دے دی ہے ۔ وزیراعظم نے وزیر قانون فروغ نسیم کو جلد آرڈیننس کا مسودہ تیار کرنے کی ہدایت کر دی ہے۔

متعلقہ عنوان :