Live Updates

قائد حزب اختلاف قومی مکالمے کی بات سے پہلے اپوزیشن اوربالخصوص بھائی اور بھتیجی سے پوچھ لیں‘ ہمایوں اختر خان

بتایا جائے اپوزیشن اپنے مفادات اور ذات کو تو نہیں لائے گی ،حکومت نے قومی معاملات پر بات چیت سے کبھی انکار نہیں کیا

منگل دسمبر 12:04

قائد حزب اختلاف قومی مکالمے کی بات سے پہلے اپوزیشن اوربالخصوص بھائی ..
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 01 دسمبر2020ء) پاکستان تحریک انصاف کے سینئر مرکزی رہنماو سابق وفاقی وزیر ہمایوں اختر خان نے کہا ہے کہ قائد حزب اختلاف نے قومی مکالمے کی بات تو کی ہے لیکن وہ بتائیں کیا اپوزیشن اس میں اپنے مفادات اور ذات کو تو نہیں لائے گی اور ملک کو درپیش چیلنجز سے نمٹنے کیلئے غیر مشروط پیشرفت کریگی ،عوام صرف حکومت کی کارکردگی پر ہی نہیںبلکہ اپوزیشن کے کردار پر بھی کڑی نظر رکھے ہوئے ہیں اور وقت آنے پر اپنے ووٹ سے محاسبہ کریں گے۔

پارٹی کے سینئر رہنمائوں سے مشاورتی ملاقات کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے ہمایوں اختر خان نے کہا کہ سب سے پہلے تو اپوزیشن کو کورونا کی دوسری لہر کو روکنے میں حکومتی اقدامات کا ساتھ دینا چاہیے لیکن یہاںاقتدار سے دوری اضطراب میں بدل چکی ہے اوریہاں تک کہہ دیا گیا ہے کہ ملک میں کورونا نام کی کوئی چیز نہیں ۔

(جاری ہے)

انہوںنے کہا کہ قائد حزب اختلاف قومی مکالمے کی بات سے پہلے اپوزیشن اتحاد میں شامل جماعتوں اور خصوصاًاپنے بھائی اور بھتیجی سے پوچھ لیں کیا وہ ملک کو درپیش چیلنجز سے نمٹنے کیلئے اپنے مفادات اور ذات کو پس پشت ڈالنے کیلئے تیار ہیںاور انہیں اس کا واضح جواب مل جائے گا۔

حکومت نے قومی معاملات پر بات چیت سے کبھی انکار نہیں کیا لیکن وزیر اعظم عمران خان کا واضح موقف ہے کہ اسے غیر مشروط ہونا چاہیے ۔ انہوںنے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان نے مشکل حالات میں اپنے عزم سے چیلنجز کا مقابلہ کیا ہے اور ملک کی کشتی کو منجدھار سے نکال کر کنارے لگایا ہے اور انشا اللہ اب ہم بہتری کی طرف تیزی سے پیشرفت کر رہے ہیں۔
کرونا وائرس کی دوسری لہر سے متعلق تازہ ترین معلومات