آذربائیجان پر ایٹم بم گرادیا جائے

آرمینیائی عوام شکست کے بعد بہکی بہکی باتیں کرنے لگے

Sajjad Qadir سجاد قادر جمعرات دسمبر 06:49

آذربائیجان پر ایٹم بم گرادیا جائے
واشنگٹن (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 03 دسمبر2020ء) آذربائیجان سے شکست کے بعد آرمینیا میں شدید غم و غصہ اور اشتعال پایا جاتا ہے اور اس حوالے سے امریکا میں شائع ہونے والے آرمینیائی اخبار نے اپنے اداریے میں ایٹم بم کے استعمال پر زور دیا ہے۔گزشتہ دنوں 6 ہفتوں کی لڑائی میں آرمینیا کوآذر بائیجان کے ہاتھوں ہزیمت اٹھانا پڑی ہے اور 3 دہائیوں سے قابض آرمینیائی فوج کو ’نگورنو کاراباخ‘ میں شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

اس شکست کے بعد امن معاہدے کے تحت کئی بڑے شہر آرمینیا کو خالی کرنے پڑے ہیں جن میں اغدام اور لاچین شامل ہیں جبکہ آرمینیائی عوام حکومت کے امن معاہدے کے خلاف سراپا احتجاج ہیں۔اسی حوالے سے امریکا میں شائع ہونے والے آرمینیائی اخبار ’اسباریز‘ نے اداریے میں آذربائیجان سے شکست کا بدلہ لینے کی ترغیب دی ہے اور ایٹم بم کے استعمال کی ضرورت پر زور دیا ہے۔

(جاری ہے)

اخبار کے اداریے میں کہا گیا ہے کہ آرمینیائی حکومت آذربائیجان کے خلاف کوئی بھی جوہری ہتھیار استعمال کرے او ر آذری دارالحکومت باکو کو اگلے 5 ہزار سال کیلئے ’بنجر زمین‘ میں بدل دے۔دوسری جانب امریکی شہر لاس اینجلس میں آذربائیجان کے قونصلر جنرل نے اخبار کے اداریے پر شدید غم و غصے کا اظہار کیا ہے اور مقامی انتظامیہ سے امریکی قوانین کے تحت تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔

خیال رہے کہ آذربائیجان اور آرینیا کی جنگ میں سب سے زیادہ جانی نقصان آرمینیا کا ہوا ہے اور اس کے ہزاروں فوجی مارے گئے ہیں۔خیال رہے کہ عالمی سطح پر ’نگورنو کارا باخ‘ آذربائیجان کا تسلیم شدہ علاقہ ہے تاہم اس پر آرمینیا کے قبائلی گروہ نے آرمینی فوج کے ذریعے قبضہ کررکھا تھا اور اس پر فریقین میں متعدد جنگیں بھی ہوچکی ہیں۔تاہم اب دونوں ممالک کے درمیان ثالثی کا کردار روس نے ادا کیا ہے اور ان ممالک کے بارڈر پر بھی روسی امن فوجیں تعینات ہیں۔